پنڈدادنخاناہم خبریں

پنڈدادنخان میں 400 روپے کی خاطر کم عمر مزدور ناقص سیفٹی انتظام کی بھینٹ چڑھ گیا

پنڈدادنخان: لیبر کا ٹھیکیداری نظام انسانی جانوں کو نگلنے لگا ، پنڈدادنخان میں ایک کم عمر مزدور ناقص سیفٹی انتظام کی بھینٹ چڑھ گیا، لیبر قوانین اور سیفٹی انتظام کے بغیر مشقت کرنے والے مزدور چار سو روپے دیہاڑی کے لیے موت کے منہ میں کام کرنے پر مجبور ہیں۔
تفصیلات کے مطابق نجی سیمنٹ فیکٹری بیسٹ وے کے پیکنگ پلانٹ میں کم عمر لڑکا صادق الامین ناقص سیفٹی انتظامات کی وجہ سے جان بحق ہو گیا۔مقامی میڈیا اور لیبر یونین سے مخفی رکھنے کی وجہ سے بروقت طبی امداد فراہم نہ کرنے کی وجہ سے موت واقع ہوئی۔
تحصیل شورکوٹ ضلع جھنگ کے رہائشی قاری قرآن محمد امین کا اکلوتا بیٹا ہے اور انتہائی مفلسی اور غربت کی زندگی گزار رہا ہے۔
فیکٹری انتظامیہ کی بے حسی کا اندازہ اس امر سے لگایا جاتا ہے کہ لاش کو لواحقین تک پہنچانے کے لیے ایمبولنس کی سہولت تک نہیں فراہم کی گئی۔
چائلڈ لیبر قانون ہونے کے باوجود اس پر عمل درآمد نا کروانا انتظامیہ کی غفلت کا منہ بولتا ثبوت ہے۔ لواحقین نے وزیر اعلی عثمان بزدار سے فیکٹری انتظامیہ کے خلاف قانونی کاروائی عمل میں لاکر شفاف انکوائری کروانے کا مطالبہ کیا ہے۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button