جہلم

میونسپل کارپوریشن عملہ کی غفلت یا ملی بھگت، ہوٹل، کھانے پینے کی دوکانوں پر مفت واٹر سپلائی جاری

جہلم: میونسپل کارپوریشن کے عملہ کی غفلت یا ملی بھگت، کاروباری اداروں کے ذمہ واٹر سپلائی کے لاکھوں کے واجبات، شہر بھر کے ہوٹل، کھانے پینے کی دوکانوں پر مفت واٹر سپلائی جاری ، تحصیل روڈ پر ایک ہوٹل دس لاکھ سے زائد کا نادہندہ ، میونسپل کارپوریشن لاکھوں کی بجلی استعمال کرکے پانی فراہم کرنے کے باوجود بل لینے میں ناکام۔
تفصیلات کے مطابق جہلم شہر میں تحصیل روڈِ ، نیا بازار، شاندارچوک، مین بازار ، اہلحدیث چوک میں سینکڑوں کاروباری ادارے، ہوٹل، تندور ، نا ن شاپ ، دودھ دہی شاپس پر مفت واٹر سپلائی چلائی جارہی ہے جس کا میونسپل کارپوریشن کو ہر کام لاکھوں روپے بجلی کا بل اداکرنا پڑتا ہے جبکہ موٹر وں کی مرمت کا خرچہ الگ سے ہے۔
اس حوالے سے معلوم ہو ا ہے کہ عملہ واٹر سپلائی کی ملی بھگت سے شہر بھر میں سینکڑوں کاروباری ادارے مفت پانی استعمال کررہے ہیں تحصیل روڈ پر واقع ایک ہوٹل مبینہ طور پر لاکھوں روپے کا نادہندہ ہونے کے باوجود نہ بل دے رہا ہے نہ اس کی سپلائی منقطع کی جارہی ہے جس کی وجہ سے میونسپل کارپوریشن کا خسارہ ہر ماہ بڑھتا ہی جارہا ہے جبکہ کئی ایک کلرکوں نے ملی بھگت سے لاکھوں روپے کے بل وصول کئے بغیر ہی ریکارڈ میں کنکشن منقطع کا اندراج کررکھا ہے حالانکہ ان نادہند ہ افراد کے کنکشن تاحال موجود ہیں اور وہ سرکاری خزانے کو ہر ماہ چونا لگا رہے ہیں۔
شہریوں نے ڈی سی جہلم سے مطالبہ کیا ہے کہ واٹر سپلائی کے نادہندگان کے خلاف سخت کاروائی کی جائے تو ہر ماہ لاکھوں روپے کا ریونیو جمع ہو سکتا ہے جبکہ ملی بھگت کرکے سرکاری خزانے کو نقصان پہنچانے والے عملہ کے خلا ف فوری تحقیقات کیلئے اینٹی کرپشن جہلم کو اپنا کردار ادا کرنا چاہئے ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button