جہلم

جہلم میں خستہ حال خطرناک عمارتوں کی بھرمار، تند و تیز آندھیوں کے باعث عمارتیں ہوا میں جھولنے لگیں

جہلم: شہر اور گردونواح میں خستہ حال خطرناک عمارتوں کی بھرمار، تند و تیز آندھیوں کے باعث عمارتیں ہوا میں جھولنے لگیں، انتظامیہ کی خاموشی لمحہ فکریہ ، شہری حلقوں کا ذمہ داران سے نوٹس لینے کا مطالبہ۔

تفصیلات کے مطابق شہر اور گردونواح میں خستہ حال اور بوسیدہ عمارتوں کی بھرمار ہے ، خستہ حال عمارتیں کسی جانی و مالی نقصان کا باعث بن سکتی ہیں، شہری علاقوں میں خستہ حال اور بوسیدہ عمارتوں کی تعداد میں روز بروز اضافہ ہورہاہے لیکن متعلقہ محکموں کی غفلت اور انتظامیہ کی چشم پوشی سے اس کی تعداد میں غیر معمولی اضافہ ہو چکا ہے۔

مون سون کی آمد سے قبل انتظامیہ اور متعلقہ محکموں کی جانب سے بوسیدہ عمارتوں سے شہریوں کے انخلاء کو یقینی بنانے کے لئے خصوصی اقدامات کی ضرورت ہے ، جس کے برعکس انتظامیہ ہر سال چشم پوشی اور غفلت کا مظاہرہ کرتے ہوئے ڈنگ ٹپاؤ پالیسی پر گامزن ہے ، جس سے مون سون کی بارشوں کے دوران قیمتی جانیں چھت گرنے سے ضائع ہونے کا اندیشہ بڑھ چکا ہے ،تمام صورتحال کی ذمہ دار انتظامیہ خواب خرگوش کے مزے لوٹ رہی ہے۔

شہریوں نے وزیر اعلیٰ پنجاب، کمشنر راولپنڈی ، ڈپٹی کمشنر سے نوٹس لینے کا مطالبہ کیاہے ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button