جہلم

ضلع جہلم میں برن یونٹ نہ ہونے کی وجہ سے شرح اموات میں اضافہ

جہلم: ضلع بھر میں برن یونٹ نہ ہونے کی وجہ سے شرح اموات میں اضافہ ، جھلسنے والے اکثر مریض لاہور یا کھاریاں لے جاتے ہوئے راستے میں ہی دم توڑ جاتے ہیں۔

ان خیالات کا اظہار شہر کی سماجی ، رفاعی ، فلاحی ، شہری تنظیموں کے عمائدین نے اخبار نویسوں سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ ضلع بھر میں کسی بھی سرکاری ہسپتال میں جدید برن یونٹ نہ ہونے کے باعث آگ سے جھلسنے والے مریضوں کو مناسب علاج معالجہ کی سہولت کی عدم دستیابی کیوجہ سے مریضوں کی شرح اموات میں روز بروز اضافہ ہو رہاہے۔

انہوں نے کہا کہ ضلع بھر کے سرکاری ہسپتالوں میں جدید برن یونٹ نہ ہونے کیوجہ سے مریضوں کو لاہور یا کھاریاں کے ہسپتالوں میں ریفر کر دیا جاتا ہے ، جس کے نتیجہ میں اکثر اوقات مریض فوری طبی امداد کی عدم فراہمی کیوجہ سے راستے میں ہی دم توڑ جاتے ہیں۔ سالانہ اربوں روپے کا زیر مبادلہ کمانے والے شہر جہلم میں آگ سے جھلسنے والے مریضوں کو جدید طبی سہولیات سے محرومی باعث تشویش ہی نہیں بلکہ باعث افسوس بھی ہے۔

شہر کی عوامی، سماجی، رفاعی، فلاحی تنظیموں کے عمائدین نے وزیر اعلیٰ پنجاب اور صوبائی وزیر صحت پنجاب سے اصلاح و احوال کا مطالبہ کرتے ہوئے سول ہسپتال میں برن یونٹ قائم کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button