جہلم

محمدی چوک جہلم تا کمیلا روڈ کو تعمیر کرنے کی بجائے ڈنگ ٹپاؤ پالیسی پر سرخی پاؤڈر لگایا جانے لگا

جہلم: محمدی چوک تا کمیلا روڈ کو تعمیر کرنے کی بجائے ڈنگ ٹپاؤ پالیسی پر سرخی پاؤڈر لگایا جانے لگا، سڑک نئے سرے سے تعمیر کی جائے پیچ ورک کرکے قومی خزانے کو نقصان پہنچانے سے گریز کیا جائے ،علاقہ مکین سراپا احتجاج، ارباب اختیار سے نوٹس لینے کا مطالبہ۔

تفصیلات کے مطابق عرصہ دراز کے بعد شہریوں کی دعاؤں اور مطالبے کو مد نظر رکھتے ہوئے منتخب ممبران نے جہلم کے علاقہ محمدی چوک تا کمیلا روڈ کے لئے فنڈز جاری کروائے اور ٹھیکیدار نے سڑک از سر نو تعمیر کرنے کی بجائے پیچ ورک کرکے ڈنگ ٹپاؤ پالیسی پر عملدرآمد شروع کررکھاہے ، جس کی وجہ سے شہریوں میں گہری تشویش پائی جاتی ہے۔

شہریوں کا کہنا ہے کہ سابق دور میں 54 کروڑ کی لاگت سے سیوریج سسٹم کی لائنیں بچھائی گئیں جن میں کھدائی کی گئی سڑکوں کی مرمت شامل تھی لیکن منتخب ممبران کی سرپرستی کیوجہ سے سرکاری محکموں کے ملازمین نے قومی خزانے کو باپ داد ا کی جاگیر سمجھ کر لوٹا اور کھدائی کی گئی سڑکوں کو از سر نوتعمیر کرنے کی بجائے پیچ ورک لگا کر کام چلا لیا، چند ماہ بعد ہی سڑکیں ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہو کر گڑھوں میں تبدیل ہوگئیں۔

2018 کے انتخابات میںقومی و صوبائی اسمبلی کے امیدواروں نے ووٹرز سے وعدہ کیا کہ اگر منتخب ہوگئے تو سڑکوں کو از سر نو تعمیر کروایا جائیگا۔ بدقسمتی سے ٹھیکیدار محمدی چوک تا کریمیہ مسجد و مدرسہ تک نئی سڑک تعمیر کرے تاکہ شہریوں کی مشکلات میں کمی واقع ہو سکے ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button