پنڈدادنخان کے معروف فنکار وسیم عارف کا جہلم اپڈیٹس کو خصوصی انٹرویو

0

وسیم عارف کا شمار شوبز میں قدم جمانے کے لئے دن رات ایک کرنے والے باہمت اور اپنی محنت کے بل بوتے پر نام بنانے والے فنکاروں میں ہوتا ہے ،معصوم شخصیت کے مالک اس وقت شوبز کی دنیا میں ایک تازہ ہو ا کا جھونکا بننے کا عزم لیکر کام کام اور بس کام میں مصروف عمل ہیں ،گزشتہ روز وسیم عارف سے ملاقات ہوئی جس کا احوال وسیم کی زبانی حاضر خدمت ہے۔

میرا تعلق ضلع جہلم کے قدیم سیاحتی شہر کھیوڑہ سے ہے ابتدائی تعلیم اپنے ہی شہر سے حاصل کی زمانہ طالب عملی ہی سے قدرتی طور پر رجحان اداکاری کی جانب تھا جسکی وجہ سے علاقائی سطع پر ہونے والے اسٹیج ڈراموں میں شمولیت لازم ہو ا کرتی تھی ٹی وی پر اداکاروں کی پرفارمنس کوغور سے دیکھتااور سوچتا کیا یہ ممکن ہوگا میں بھی ان کی طرح کام کروں ،تاہم دل کا شوق دل ہی میں رہا۔

فیملی میں دور دور کوئی اس لائن میں تھا نہیں اور متوسط گھرانے سے ہونے کی وجہ سے ایف اے پاس کرنے کے بعد نوکری کی تلاش شروع کر دی، کام کی تلاش مجھے 2014میں کراچی لے گئی جہاں میں نے رامادہ ہوٹل میں بطور ڈرائیورجاب شروع کردی۔

ایک دن مجھے کار بکنگ پرجیوکے شوٹ جانے کا موقع ملا جہاں ڈرامے کی شوٹنگ چل رہی تھی وہاں انہیں ایک منٹ کے رول کے لئے ایک بندے کی ضرورت تھی ،اندھا کیا چائیے دو آنکھیں، میں نے موقع غنیمت جانا اور اس مختصر رول کی ہامی بھر لی وہ ایک منٹ کا رول جو فیصل قریشی کے ساتھ تھا شو بزمیرا پہلاقدم بن گیا،اس شوٹ پر میری ملاقات طیب راؤسے ہوئی جو وہاں کوآرڈنیٹر تھا انہوں نے مجھے پہلی بارباظابطہ عادل مراد کی پروڈکشن میں بننے والے ڈرامے (cort name red)میں بطور S.H.Oکاسٹ کیا۔

کہتے ہیں لگن سچی ہو تو راہیں مل ہی جاتی ہیں یہاں میری ملاقات انتہائی نفیس انسان اور منفردفنکار سہیل سمیر سے ہوئی ،اس فیلڈ میں سمیر بھائی نے میری بہت رہنمائی کی ،اب میں نے کراچی ہی میں رینٹ کارکا بزنس بھی شروع کیا اور ساتھ ساتھ اپنے شوق کو بھی ٹائم دینے لگا،اللہ پاک کا بڑا کرم ہے میں نے ہمیشہ کسی کام کو چھوٹا نہیں سمجھااور ہمیشہ اپنے سینئرز کی عزت کی ،اسی محنت کاثمر ہے کہ اب تک پاکستان کے تمام بڑے چینلوں سے آن اےئر ہونے والے بڑے پروڈیوسر وں کے ڈراموں میں معروف فنکاروں کے ساتھ کام کر چکا ہوں۔

ابھی میں نے اس فیلڈ میں بہت آگے جانا ہے میری دلی خواہش کہ میں اپنے علاقے کی پہچان بن سکو، اب تک میں ہم ٹی وی کے ڈارموں (جیٹھانی ، ایسی ہے تنہائی، محبت مشکل ہے)، پی ٹی وی سے بیچاری، کو ڈ نیم ریڈ ،اے ٹی وی سے (چہروں کے پیچھے) ، اے پلس سے ( یہ میرا دیوانا پن ، مجھے بھی خدا نے بنایا ہے، چاند پے داغ نہیں)، اے آر وائے سے( دو بیویاں ایک بیچارہ)جیو ٹی وی سے (خان)، آج ٹی وی سے (بیوی سے بیوی تک)،اے ٹی وی سے (گلی میں چاند نکلا) جیسے ہٹ ڈراموں میں مختلف کرداروں میں فارم کر چکا ہوں جسے ناظرین نے بہت پسند کیا ہے۔

ابھی PTVسے ایک پلے آن ائیرہے جس کا نا م ہے (کچھ اسطرح)جس کے ڈائریکٹر جبران اور پروڈیوسر فیصل سوری ہیں،مستقبل اور گھر بسانے کے متعلق پوچھے گئے ایک سوال کے جواب میں وسیم نے بتایا کہ میری پہلی ترجیع ہے کہ شوبز کوفل ٹائم دوجبکہ گھر تو ان شاء اللہ گھر والوں کی مرضی سے ہی بسے گا آخر میں وسیم نے شوبز میں رہنمائی کرنے پر ڈائریکٹر احسن تالش ،عامر یوسف،اور فاروق پریو سمیت سینئراداکار ساتھیوں میں وہاج خان ،حنان صمد،سمیت آغا شیرازکا شکریہ ادا کیا جن کی بندولت انہیں کم وقت میں عمدہ کام کرنے کا موقع ملا۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.