مکران کوسٹل ہائی وے بس فائرنگ؛ سوہاوہ کا سپوت پاک نیوی کا جوان شہید

0

سوہاوہ/کوئٹہ: بزی ٹاپ کے قریب نامعلوم افراد نے سوہاوہ کے سپوت اور سیکیورٹی اہلکاروں سمیت 14 افراد کو بسوں سے اتار کرشہید کردیا، بس میں سوہاوہ کا رہائشی پاک نیوی کا لانس نائیک حمزہ علی بھی سوار تھا۔

تفصیلات کے مطابق سوہاوہ کے علاقہ ڈھوک غلام علی داخلی موضع سگیال سے تعلق رکھنے والا اور پاک نیوی میں اپنی خدمات سر انجام دینے والا لانس نائیک حمزہ علی چھٹی پر گھر آ رہا تھا کہ راستے میں بلوچستان کے علاقہ مکران کوسٹل ہائی وے پر بزی ٹاپ کے قریب نامعلوم افراد نے بس کو روک کرسکیورٹی اہلکاروں سمیت 14 افراد کو شہید کر دیا جس میں لانس نائیک حمزہ علی شہید بھی شامل ہے۔

واقعے کی اطلاع ملنے پر لیویز اہلکار اور سیکیورٹی فورسز موقع پر پہنچ گئے۔ علاقے کا گھیراؤ کرلیا گیا ہے جب کہ لاشوں کو قریبی اسپتال منتقل کردیا گیا ہے۔ جاں بحق افراد میں سے 11 کی شناخت لانس نائیک حمزہ علی، یوسف، وسیم، فرحان اللہ، علی رضا، ذوالفقار، ہارون، علی اصغر، رضوان، وسیم اور ذہین کے نام سے ہوئی ہے۔ ترجمان پاک بحریہ نے کہا ہے کہ شہید افراد میں بحریہ کے اہلکار بھی شامل ہیں۔

شہید حمزہ کا ایک بھائی اور ایک بہن ہے، حمزہ علی کی سروس کا پانچواں سال تھااور وہ غیر شادی شدہ تھا۔ شہید کی میت 19 اپریل بروز جمعہ ان کے آبائی گاؤں پہنچائی جائے گی۔

وزیر اعظم عمران خان نے کوسٹل ہائی وے فائرنگ واقعے کی مذمت کرتے ہوئے رپورٹ طلب کرلی ہے۔ انہوں نے کہا کہ وحشیانہ حملے کے مجرموں کو انصاف کے کٹہرے میں لایا جائے۔

وفاقی وزیر اطلاعات فواد چوہدری نے کوسٹل ہائی وے فائرنگ واقعے کی منظم کرتے ہوئے کہا کہ کوئٹہ کی ہزار گنجی سبزی منڈی میں خودکش حملہ، پشاور حیات آباد میں کالعدم ٹی ٹی پی کا واقعہ اور کوسٹل ہائی وے کے بہیمانہ واقعے میں ایک ہی منظم انداز نظر آرہا ہے۔ ہم نے امن کے لئے بہت قربانی دی ہے، انشاء اللہ ہم ان واقعات کے ذمہ داروں کو مثال عبرت بنا دیں گے، ہم نے دہشت گردی کی جنگ میں بڑی کامیابیاں حاصل کی ہیں لیکن جنگ ابھی ختم نہیں ہوئی۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.