معصوم بچے پر مبینہ تشدد کرکے قتل کرنے والے میاں بیوی ضمانت منسوخ ہونے پر گرفتار

0

جہلم:معصوم بچے پر مبینہ تشدد کرکے قتل اور سات سالہ بچی کو شدید زخمی کرنے والے میاں بیوی کو ضمانت منسوخ ہونے پر لاہور ہائی کورٹ راولپنڈی بنچ سے گرفتار کر لیا گیا۔

رپورٹ کے مطابق ایک ماہ قبل شیشہ گراؤنڈ مشین محلہ جہلم میں ولید طارق نامی شخص نے مبینہ طور پر دوسری بیوی سمیرا رانا جو کہ ریلوے ہسپتال جہلم میں میڈیکل آفیسر ہے کے ساتھ ملکر نو سالہ بیٹے وائیل اور سات سالہ بچی خولہ کو ہانڈی والے گرم چمچے اور ڈنڈوں سے تشدد کا نشانہ بنایا تھا۔

تشدد سے نو سالہ بچہ اور سات سالہ بچی شدید زخمی ہو ئے نو سالہ بچہ تشویشناک حالت میں سات دن تک اسپتال میں زندگی اور موت کی کشمکش میں مبتلا رہنے کے بعد بچہ جاں بحق ہو گیا تھا جس پر بچے کی والدہ اور دیگر لواحقین غم سے نڈھال ہیں۔

اس سے قبل بچے کی حقیقی والدہ کی درخواست پر والد اور سوتیلی والدہ کے خلاف تھانہ سٹی میں مقدمہ درج ہوا جس میں ملزمان نے قبل از گرفتاری عبوری ضمانتیں کروا رکھی تھیں۔

12 نومبر کو سیشن کورٹ جہلم سے عبوری ضمانتیں خارج ہونے پر میاں بیوی فرار ہو گئے تھے جن کو 10 دسمبر کو لاہور ہائی کورٹ راولپنڈی بنچ میں ضمانت منسوخ ہونے پر گرفتار کر لیا گیا۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.