جہلم

جہلم شہر میں چنگ چی رکشوں کی تعداد 4 ہزار سے تجاوز کر گئی

جہلم: شہر میں چنگ چی رکشوں، لوڈرز کی بھرمار چنگ چی رکشوں و لوڈرز کے ڈرائیورز کو قانونی دائرہ کار میں شامل کرنے اور ٹریفک کا نظام بہتر بنانے میں انتظامیہ کی سرد مہری سوالیہ نشان بن گئی۔

ذرائع کے مطابق شہر میں چنگ چی رکشوں کی تعداد 4ہزار سے تجاوز کرچکی ہے ان میں سے 70 فیصد چنگ چی رکشے کم عمر اور عمر رسیدہ ڈرائیورز چلا رہے ہیں جو ٹریفک قوانین سے نا بلد ہیں اور انکے پاس نہ تو لائسنس ہے اور نہ ہی شناختی کارڈ۔

یہاں پر یہ امر بھی دلچسپ ہے کہ اہم چوک چوراہوں جن میں سول ہسپتال چوک، شاندار چوک ، محمدی چوک’روہتاس روڈ چوک’چوک گنبد والی مسجد، جادہ چوک’ قبرستان چوک’بلال ٹاؤن ،کالا گجراں سمیت دیگر اہم چوک چوراہے شامل ہیں پر جہاں پر غیر قانونی چنگ چی رکشہ اڈے قائم کر کے رکشے کھڑ ے کئے جاتے ہیں جو ٹریفک کی روانگی میں سب سے بڑی رکاوٹ بنتے ہیں۔

ان غیر قانونی اڈوں پرٹھیکیدار کے کارندے رکشہ ڈرائیوروں سے ٹیکس وصول کرتے دکھائی دیتے ہیں جس کے خلاف آج تک کوئی ایکشن نہیں لیا جا سکا۔

شہر کی سماجی ، رفاعی ، فلاحی ، شہری تنظیموں کے عمائدین نے ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر شاکر حسین داوڑ، ڈی ایس پی ٹریفک سے نوٹس لینے کا مطالبہ کیاہے ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button