جہلماہم خبریں

سب وے غندہ گردی و تشدد کیس، ندیم خادم اور راشد گھرمالہ سمیت 40 افراد کے خلاف مقدمہ درج

جہلم: سابق لیگی ایم پی اے نے ساتھیوں کے ہمراہ اپنے کاروباری پارٹنر کو تشدد کا نشانہ بنا ڈالا، ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل، ویڈیو وائرل ہونے پر ڈی پی او جہلم کا نوٹس، کاروباری پارٹنر کے ہوٹل پر دھاوا بولنے اور ہوٹل میں موجود افراد کو تشدد کا نشانہ بنانے پر سابق ایم پی اے ندیم خادم، سابق چیف آفیسر چوہدری راشد گرمالہ سمیت درجنوں افراد پر مقدمہ درج، گرفتاری کیلئے ٹیمیں تشکیل، بروقت کارروائی نہ کرنے پر ایس ایچ اور صدر لائن حاضر۔ ہوٹل پر قبضہ نہیں کیا لین دین کا تنازعہ ہے۔ سابق لیگی ایم پی اے کا موقف

تفصیلات کے مطابق طاہر اسلم نے تھانہ صدر کو درخواست دی کہ بروز ہفتہ6بجے شام پاکستان مسلم لیگ (ن) کے سابق رکن پنجاب اسمبلی چوہدری ندیم خادم، سابق چیف آفیسر چوہدری راشد گرمالہ، چوہدری غلام احمد، ارتضا رزاق اور 40 نامعلوم اشخاص مسلح آتشیں سے لیس میرے ریسٹورنٹSUBWAY پرحملہ آور ہوئے۔

طاہر اسلم نے بتایا کہ حملہ آوروں نے میرے دفتر کا تالا توڑا الماری کے سیف توڑ دیے جس میں موجودرقم 31لاکھ 93ہزار نکال لی اور سیکورٹی کیمرے بھی توڑ دیے۔ مذکوران نے میرے علاوہ دیگر ملازمین کو شدید ذد وکوب کیا اور پسٹلز کے بٹ مارے۔یہ حملہ انہوں نے ریسٹورنٹ پر قبضہ کی نیت سے کیا ۔

اس واقعہ کا شاکر حسین داوڑ ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر جہلم نے سخت نوٹس لیا اورمقدمہ نمبر 136 بجرم 440/342/337AI/148/149/511 ت پ تھانہ صدر درج اور ملزمان کی گرفتاری کے لیے اکرم گوندلDSPصدر سرکل کی سربراہی میں ریڈنگ پارٹیز تشکیل دے دی گئیں ہیں۔ ظہیر الدین بابر SI/SHOتھانہ صدر کو بروقت کارروائی نہ کرنے پر لائن حاضر کر دیا گیا۔

سابق ایم پی اے چوہدری ندیم خادم کا موقف ہے کہ راجہ طاہراسلم نے گالیاں دیں، 23مرلے اراضی پر محیط سب وے کا آدھا حصہ میرے ماموں کے نام ہے آدھا قاسم کے،میرے ماموں نے مجھے پاور آف اٹارنی دی ہے لہٰذا ہم اپنے ہوٹل حساب کتاب کرنے آئے تھے قبضہ نہیں۔

انہوں نے کہا ہمیں نہ کرایہ دیا جا رہا ہے نہ منافع،راجہ طاہر کا اس پراپرٹی سے کوئی لین دین نہیں۔ کمزور آدمی نہیں ہوں کاروباری لوگ ہیں، سیاسی مخالفین مذکورہ افراد کو استعمال کر رہے ہیں اور ان کی پشت پناہی کر رہے ہیں۔ اپنا تحفظ کرنا جانتے ہیں اپنے حقوق کا تحفظ کرنا بھی جانتے ہیں۔ جو میرا حق چھیننے کی کوشش کرے گا اسے نہیں لینے دوں گا۔

چوہدری ندیم خادم نے کہا کہ ڈی پی او جہلم نے تین دن کا وقت دیا ہے ان کے کہنے پر وہاں سے اٹھا ہوں تین دن میں یہ مسئلہ حل ہو جائے گا۔ نا ہوا تو وہیں تین دن بعد جا کر بیٹھوں گا۔پچاس فیصد کا مالک ہوں میرا حق ہے۔

اس واقعہ کے حوالے سے وزیراعظم پاکستان عمران خان کے معاون خصوصی شہباز گل نے بھی ویڈیو شئیر کی ہے جس میں انکا کہنا ہے کہ ’مسلم لیگ نواز کے سابقہ رکن پنجاب اسمبلی جہلم چوہدری ندیم خادم کی Sub Way جہلم میں غنڈہ گردی،ن لیگی جہاں بھی ہوں گے بدزبانی گالم گلوچ اور غنڈہ گردی سے ثابت کریں گے کہ مریم صفدر اور نواز شریف کے فالوورز ہیں۔زبان ملاحظہ فرمائیں انکی‘۔


پنجاب پولیس نے اس واقعہ کے حوالے سے ٹویٹر پر اپنا موقف دیتے ہوئے کہا ہے کہ’ کاروباری تنازعہ کی وجہ سے سابق ایم پی اے اور ان کے کاروباری پارٹنر میں یہ واقعہ پیش آیا ماسک پہننے پر تشدد کی بات بے بنیاد اور من گھڑت ہے۔ مقامی پولیس فریقین کی شکایات کا جائزہ لے کر قانون کے مطابق کاروائی عمل میں لا رہی ہے‘۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button