جہلم

جہلم میں قائم درجنوں بیکریوں اور ان کے کارخانوں میں صفائی کا معیار ایک بار پھر ناقص

جہلم: شہر اور گردونواح میں قائم درجنوں بیکریوں اور انکے کارخانوں میں صفائی کا معیار ایک بار پھر ناقص ۔ مٹھائی اور بیکری کی اشیاء کی تیاری میں استعمال ہونے والی اشیاء جن میں مضر صحت ناقص گھی چینی کی جگہ کیمیکل ، کریم وغیرہ شہریوں کے لئے بیماریوں کا سبب بننے لگی ، بعض مٹھائی اور بیکری مالکان مصنوعات پر مدت استعمال کی تاریخ بھی درج نہیں کرتے ، بحث پر شہریوں کو گالی گلوچ اور سنگین تنائج کی دھمکیاں دی جانے لگیں۔

تفصیلات کے مطابق شہر اور گردونواح میں قائم درجنوں بیکریوں ، سویٹس شاپس اور انکے کارخانے ایسے بھی ہیں جن کی کئی کئی ہفتے صفائی نہیں کی جاتی جس کے باعث ہر سو بدبو اور کچرا ان کارخانوں کی پہچان بنا ہوا ہے ، جبکہ غیر معیاری اشیاء سے ان کی تیاری دیدہ دلیری کے ساتھ کی جاتی ہے جن میں خصوصاً غیر معیاری گھی مضر صحت دودھ ، چینی کی جگہ دیگر کیمیکل اور ناقص کریم وغیرہ شامل کی جاتی ہیں ، جن کے استعمال سے شہری موذی امراض کا شکار ہورہے ہیں۔

شہر میں پنجاب فوڈ اتھارٹی کے ذمہ داران کی عدم دلچسپی و چشم پوشی کے باعث مضر صحت اشیاء کی فروخت میں روز بروز اضافہ ہو رہا ہے جن کے استعمال سے مریضوں کی تعداد دوسرے شہروں کی نسبت زیادہ ہے ، مٹھائی کی تیاری میں غیر معیاری دودھ ،چینی کی جگہ سکرین ڈال کر تیار کی جارہی ہے۔

دوسری جانب بعض بیکری و سویٹ شاپس کے مالکان نے مصنوعات پر زائد المعیادمدت کی کوئی تاریخ درج نہیں کررکھی ہوتی ہے جو کہ قانوناً جرم ہے مگر یہ سر عام اور دیدہ دلیری کے ساتھ سب کچھ ہو رہاہے ، شہریوں کے احتجاج پر کبھی کبھار پنجاب فوڈ اتھارٹی کے ذمہ داران بیکریوں ، مٹھائی کی دکانوں پر خانہ پوری کرنے کے لئے فرضی چھاپے مارکر افسران بالا کوسب اچھا ہے کی رپورٹس پیش کر دیتے ہیں۔

شہریوں نے بیماریاں پھیلانے کی اجازت دینے والے پنجاب فوڈ اتھارٹی کے ذمہ داران سمیت ناقص و غیر معیاری اشیاء خوردونوش فروخت کرنے والوں کے خلاف کارروائی کا مطالبہ کیا ہے ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button