جہلم میں نجی تعلیمی اداروں کے داخلی راستوں پرگندگی کے ڈھیر، طلباء و طالبات سمیت اساتذہ سراپا احتجاج

0

جہلم: جہلم کے پوش علاقوں میں قائم نجی تعلیمی اداروں کے داخلی راستوں پرگندگی کے ڈھیر ،سینٹری ورکروں نے شہر کی گندگی تعلیمی اداروں کے داخلی و خارجی راستوں پر پھینکنا شروع کررکھی ہیں ۔زیر تعلیم طلباء و طالبات سمیت اساتذہ کا شدید احتجاج ، ایڈمنسٹریٹر میونسپل کمیٹی جہلم سے نوٹس لینے کا مطالبہ ۔

تفصیلات کے مطابق اندرون شہر میں واقع نجی تعلیمی ادارے کے داخلی و خارجی راستوں پر میونسپل کمیٹی کے سینٹری ورکروں نے گندگی کے ڈھیر لگانے شروع کررکھے ہیں جس کی وجہ سے زیر تعلیم ننھے نونہال مختلف موذی امراض میں مبتلا ہونا شروع ہو چکے ہیں۔

اس حوالے سے بچوں کے والدین نے صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ میونسپل کمیٹی جہلم میں جنگل کا قانون نافذ ہے سینٹری ورکر زگلی محلو ں کی گندگی فلتھ ڈپو میں پھینکنے کی بجائے سرکاری اداروں اور شہریوں کے گھروں کے سامنے چھوڑ کر رفو چکر ہو جاتے ہیں جسکی وجہ سے اردگرد مکھیوں مچھروں کی بھرمارہو چکی ہے ۔ سکولوں کے سامنے جمع ہونے والی گندگی سے زیر تعلیم طلباء و طالبات مختلف موذی امراض کا شکار ہو رہے ہیں۔

بچوں کے والدین نے ڈپٹی کمشنر جہلم ، ایڈمنسٹریٹر میونسپل کمیٹی جہلم سے مطالبہ کیا کہ سرکاری و نجی تعلیمی اداروں کے داخلی و خارجی راستوں پر سے گندگی کے ڈھیر ہٹانے کے احکامات جاری کئے جائیں ، تاکہ طلباء و طالبات بیماریوں سے محفوظ رہ سکیں۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.