جہلم

کورونا وائرس سے سکولوں کی رونقیں ماند پڑ گئیں

جہلم: کورونا وائرس سے سکولوں کی رونقیں ماند پڑ گئیں ، صبح سویرے طلباء و طالبات تلاوت کلام پاک، قومی ترانوں سمیت اسمبلیوں میں موجودگی اساتذہ کی جانب سے معلومات کی آگاہی سب کچھ ختم ہو کر رہ گیا ،شہر کی سماجی ، رفاعی ، فلاحی ، مذہبی تنظیموں کے عمائدین نے سکولوں میں کورونا ایس او پیز کے تحت کلاس ٹو کلاس اسمبلی کروانے کا مطالبہ کر دیا۔

تفصیلات کے مطابق کورونا وائرس کی روک تھام کے سلسلے میں حکومت پنجاب نے سکولوں کو فعال کرنے کے احکامات تو جاری کر دئیے گئے لیکن بد قسمتی سے نونہالوں کی اسمبلیوں میں موجودگی تلاوت کلام پاک، قومی ترانوں اور اساتذہ کا بروقت اسمبلیوں میں حاضری یقینی بنانا قصہ پارینہ بن کر رہ گیا۔

اسمبلیوں کے خاتمے سے اساتذہ کی جانب سے بچوں میں تعلیم و تربیت سمیت مذہبی آگاہی دینے سے قاصر ہوکر رہ گئے ہیں ، جبکہ بچے اسمبلیوں میں قومی ترانو ں سمیت مذہبی آگاہی سے بھی دور ہوتے جارہے ہیں جس سے بچے صبح سویرے پاکستان کے قومی ترانوں سمیت قرآنی آیات بھی ذبانی یاد کر لیتے تھے۔

شہر کی سماجی ،رفاعی ،فلاحی، مذہبی تنظیموں کے عمائدین نے حکومت وقت سے مطالبہ کیا ہے کہ کورونا ایس او پیز کے مطابق روزانہ کلاس ٹو کلاس اسمبلیوں کا اہتمام کروایا جائے تاکہ بچوں میں آگاہی سمیت انکے ذہنوں میں قومی ترانوں اور قرآنی آیات نقش ہوسکیں۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button