جہلم

ٹریفک چالان کی فیسوں میں اضافہ، بغیر ہیلمٹ موٹرسائیکل چلانے پر اب 600 روپے جرمانہ ادا کرنا ہوگا

جہلم: ضلع جہلم سمیت پنجاب بھر میں ٹریفک چالان کی فیسوں میں اضافہ ، بغیر ہیلمٹ موٹرسائیکل چلانے پر 200 کی بجائے 600 روپے جرمانہ ادا کرنا ہوگا۔ کارسواروں کیلئے سیٹ بیلٹ،موبائل کے استعمال پرجرمانہ 750، ڈرائیونگ لائسنس نہ ہونے پر 750 روپے جرمانہ ادا کرنا ہوگا۔ نیز کم عمر موٹر سائیکل سواروں کو ڈرائیونگ کرنے پر 500 روپے جرمانہ عائد کیا جائے گا۔

تفصیلات کے مطابق پنجاب حکومت نے جہلم سمیت صوبہ بھر میں موٹر سائیکل بغیر ہیلمٹ کے چلانے پر چالان 200 روپے کی بجائے 600 روپے ہوگا،موٹر سائیکل سوار کیلئے قانون شکنی پر چالان میں 300 سے 400 روپے تک اضافہ ہوگا۔ اوورسپیڈ، نو پارکنگ، غلط سائیڈ اور رات کو بغیر لائٹس کے موٹرسائیکل چلانے پرجرمانہ 200 سے 400 روپے کرنے کی منظوری، رکشہ چلانے والوں کے جرمانوں میں 250 سے 500 روپے تک کا اضافہ کردیا گیا۔

کم عمر موٹر سائیکل چلانے والوں پر بھی چالان 500 روپے جرمانہ عائد کرنے کی منظوری دے دی گئی ہے،ڈرائیونگ لائسنس نہ ہونے پر موٹر سائیکل سوار اور رکشہ ڈرائیور پر 600 روپے اورگاڑی چلانے  والے پر 750 روپے جرمانہ کرنے کی منظوری دے دی گئی۔ مسافر گاڑیوں پر ٹریفک چالان 1000 روپے سے 2000 روپے تک کرنے کی منظوری دے دی گئی۔

کارسواروں پر چالان سیٹ بیلٹ، موبائل کے استعمال پرجرمانہ 500 سے 750 تک کرنے کی منظوری دے دی گئی ہے ۔ خراب ڈرائیونگ، پریشر ہارن، غلط سائیڈ پرگاڑی چلانے پر جرمانہ 1000 روپے کرنے کی منظوری دے دی گئی ہے ، جعلی نمبر پلیٹ والی موٹرسائیکلوں پر1000 اور گاڑی پر2000 روپے تک جرمانہ کرنے کی منظوری دی گئی ہے۔

ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ 5 سال پرانی گاڑیوں کیلئے روڈ فٹنس سرٹیفکیٹ حاصل کرنا لازم ہوگا۔ موٹرسائیکل اور رکشوں کیلئے فی الحال جرمانے نہیں بڑھائے گئے۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button