جہلم

میری بھانجیوں اور بھانجوں نے پولیس سے ملی بھگت کر کے ہمارا سکھ چین برباد کر دیا۔ گلشن بی بی

جہلم: محلہ اسلام پورہ کی رہائشی گلشن بی بی زوجہ محمد اسلم نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ میری بھانجیاں عاصمہ ، آسیہ ، صباء ، مصباح،ہمشیرہ چائنہ عرف نرگس کے بیٹوں نے پولیس کے ساتھ ملی بھگت کرکے ہمارا سکھ چین برباد کر دیاہے ، معمر خاتون نے کہا کہ میری بھانجیوں اور بھانجوں نے تھانہ سٹی کے سب انسپکٹر بشارت کے ساتھ معاملات طے کررکھے ہیں ،اس طرح پولیس ملازمین جن میں محافظ بھی شامل ہیں آئے روز چادر چاردیواری کا تقدس پامال کرتے ہوئے گھر میں داخل ہو جاتے ہیں اورتلاشی کے بہانے ہماری عدم موجودگی میں دروازے ، کھڑیاں توڑ رہے ہیں ، متاثرہ خاتون نے بتایا کہ میں پچھلے 8/10 سالوں سے گجرات میں مقیم ہوں چند برس قبل میں نے ڈی پی او جہلم سے بالمشافہ ملاقات کرکے درخواست کی کہ میری رہائش گاہ میں پولیس چوکی قائم کر دی جائے تاکہ محلہ اسلام پورہ جو ( کراچی کے علاقہ ریڑھی گوٹھ ) کا روپ دھار چکا ہے جس سے سینکڑوں نوجوان موت کی وادی میں داخل ہو چکے ہیں سے خاتمہ ہو جائیگا۔ جس پر 2016 ء میں تعینات ڈی پی اونے میری بات کو سنی ان سنی کر دی ، معمر خاتون نے کہا کہ میری عدم موجودگی میں پولیس کا میرے گھر میں داخل ہونا دروازے کھڑکیاں توڑنا سمجھ سے بالا تر ہے ، میرا نواسہ جس کی عمر 12/14 سال ہے ، گجرات سے 2 روز قبل فوتگی پر آیا تو چائنہ عرف نرگس کی بیٹیوں نے پولیس ملازمین کے ساتھ ساز باز کرکے میرے نواسے کو گرفتار کروادیا جس کا منشیات فروشی کے ساتھ کوئی تعلق واسطہ نہیں ، بلکہ ہم لوگ محنت مزدوری کرکے گزر بسر کر رہے ہیں ، متاثرہ خاتون نے ڈی پی او جہلم سے مطالبہ کیاہے کہ ہمیں انصاف فراہم کیا جائے انکوائری کمیٹی تشکیل دیکر ملوث افراد کے خلاف قانونی کارروائی عمل میں لائی جائے تاکہ منشیات فروشی کے مکروہ دھندے میں ملوث اصلی چہرے بے نقاب ہو سکیں ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button