جہلم

دودھ جلیبی، گاجر حلوہ اور گرما گرم گلاب جامن جہلم میں سردیوں کی سوغات، خصوصی رپورٹ

جہلم: سردیوں کے موسم کے آغاز سے قبل خستہ اور لذیز جلیبیوں کی مانگ میں اضافہ ہو جاتا ہے ، قبرستان چوک میں امین جلیبی کے نام سے جلیبی کی دکان موجود ہے ، جہاں سارا دن رات گئے تک جلیبیاں خریدنے والوں کی کثیر تعداد موجود ہوتی ہے ۔جلیبیوں کے شوقین چند روپوں کے عوض جلیبیاں خریدتے دکھائی دیتے ہیں کلو ، 2 کلو جلیبیاں خریدنے والوں کی کثیر تعداد موجود ہوتی ہے۔

تفصیلات کے مطابق سردیوں کے موسم میں دودھ جلیبی ، گاجر حلوہ اور گرما گرم گلاب جامن کو سردیوں کی سوغات کہا جاتا ہے کھانے کے بعد اگر مٹھائی میں یہ سوغات شامل ہو جائے تو مزہ دوبالا ہوجاتا ہے۔

کئی دہائیوں سے قائم امین جلیبی کے مالک رضوان کا کہنا ہے کہ میرا تعلق شہر سے مجھ سے قبل میرے والد محمد امین جلیبیاں تیار کرتے تھے، ہمارے ہاں حفظان صحت کے اصولوں کے عین مطابق جلیبیاں تیار کرکے فروخت کی جاتی ہیں جس کیوجہ سے ہماری دکان پر گاہکوں کا تانتا بندھا رہتا ہے۔

انہوں نے صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ مجھ پر اللہ پاک کا خاص کرم ہے ، اور میں ہمیشہ اللہ پاک کا لاکھ لاکھ شکرادا کرتا ہوں کہ محنت میں عظمت ہے ، میری خستہ جلیبیوں کی بہت زیادہ مانگ ہوتی ہے ، لوگ بیرون ملک سمیت اندرون ملک میں بھی میری تیار کردہ خستہ جلیبیاں لے کر جاتے ہیں۔

انہوں نے بتایا کہ کبھی ملاوٹ نہیں کی خالص چینی، خالص میدا اور اعلیٰ کوالٹی کے کوکنگ آئل میں جلیبیاں تیار کرتے ہیں ، عید میلاد النبیﷺ یا کوئی بھی تہوار ہو تو گاہک زیادہ ہوجاتے ہیں ، شہر کے اندر مٹھائیوں کی بڑی بڑی دکانیں موجود ہیں ، لیکن اہم شخصیات سمیت شہری میری دکان سے مٹھائیاں خریدنے کو ترجیح دیتے ہیں حالانکہ میری ایک چھوٹی سی دکان ہے ، اللہ پاک میری سوچ سے کہیں زیادہ حلال رزق مہیا کر رہا ہے۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button