دینہ

دین کی تبلیغ کے تمام شعبوں میں خلوص کی ضرورت ہے۔ امیر عبدالقدیر اعوان

دینہ: دین کے تمام شعبوں درس و تدریس ،تحریر وتقریرجہاں تک چلے جائیں ان سب کی اساس صرف دل کا خلوص ہے ۔اور اخلاص کے حصول کے لیے کیفیات قلبی حاصل کرنے کے لیے کسی روشن قلب کے پاس حاضر ہونا ہو گا۔

ان خیالات کا اظہار شیخ سلسلہ نقشبندیہ اویسیہ امیرعبدالقدیر اعوان نے روحانی اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ انہوں نے کہا کہ مخلوق خدا کو وہی فائدہ دے سکتا ہے جو اللہ کے ساتھ وفا کر رہا ہو ۔جس نے اپنے خالق سے وفا نہ کی وہ کسی سے وفا نہیں کر سکتا ۔ہر پاکستانی کا یہ فرض ہے کہ ملک و قوم کی ترقی کے لیے اپنا مثبت کردار ادا کرے ۔سب سے پہلے ہمارے اندر ایمان کا ہونا ضروری ہے آج وطن عزیز کو ایماندار لوگوں کی ضرورت ہے ۔جب ایمان مضبوط ہو گا تو ہمارے معاملات میں بھی بہتری آئیگی جس سے معاشرہ بھی خوبصورت ہو گا۔

انہوں نے یوم کشمیر کے حوالے سے بات کرتے ہوئے کہا کہ کا ش آج ہم خود اپنے پاؤں پر کھڑے ہوتے اور عملی طور پر کشمیریوں کے ساتھ یکجہتی میں اپنا بھر پور کردار ادا کرتے خالی نعروں کی حد تک نہ رہتے ۔

انہوں نے مزید کہا کہ دل میں اخلاص کو پیدا کرنے کے لیے ذکر قلبی کی ضرورت ہے تاکہ ہم اپنے زنگ آلود دلوں کو اللہ اللہ کی ضربیں لگا کر دور کرسکیں۔جب دل صاف ہوتا ہے تو بندہ اپنے فیصلے حق پر کرتا ہے دل سے بیماریاں ختم ہوتی ہیں جو برائی کا سبب بنتی ہیں۔اللہ کریم صحیح شعور عطا فرمائیں۔آخر میں انہوں ملکی سلامتی اور بقا کی اجتماعی دعا فرمائی ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button