جہلم کے پوش علاقہ کالا گجراں میں سپیڈ بریکروں کی بھر مار شہری پریشان، حادثات معمول بن گئے

0

جہلم: جہلم کے پو ش علاقہ کالا گجراں میں سپیڈ بریکروں کی بھر مار شہری پریشان ، حادثات معمول بن گئے ،ون ویلروں اور اوور سپیڈ ٹرانسپورٹ کو کنٹرول کرنے کیلئے شہریوں کی جانب سے بنائے گئے سپیڈ بریکر بغیر کسی ریفلیکٹر ٹیب یا نشان کے شہر میں ضعیف العمر افراد اور کمسن بچوں کیلئے مسائل کا سبب بننے لگے ۔

میونسپل کمیٹی کا عملہ اور شہری بغیر کسی لائحہ عمل کے جب چاہتے ہیں اور جہاں چاہتے ہیں چوٹی نما بریکر بنا لیتے ہیں ،جو شہریوں کے لئے وبال جان بن گئے ۔ بغیر کسی لائحہ عمل کے جب کوئی شہری چاہتا ہے اپنے دروازے کے آگے سپیڈ بریکر بنا لیتا ہے معذور افراد اور کمسن بچے متعد دمقامات پر سپیڈ بریکر سے پاؤں پھسلنے سے گر کر شدید زخمی بھی ہو چکے ہیں۔ شہریوں نے ڈپٹی کمشنر جہلم سے اصلاح و احوال کامطالبہ کر دیا ۔

تفصیلات کے مطابق جہلم کے پوش علاقہ کالا گجراں کی سڑکوں پر کنکریٹ شدہ گلیوں میں بااثر افراد نے بغیر کسی لائحہ عمل کے انتہائی اونچے ٹیلے نما سپیڈ بریکر بنا نے شروع کر رکھے ہیں جس کی وجہ سے ضعیف العمر ،معذور افراد اور کمسن بچوں کو گزرنے میں دشواری کا سامنا کرنا پڑتا ہے ۔ ان سپیڈ بریکروں سے متعدد افراد پھسل کر گرنے سے شدیدذخمی بھی ہوچکے ہیں۔

جب اس کی باز پرس متعلقہ بااثر افراد سے کی جاتی ہے تو وہ کہتے ہیں کہ یہ سپیڈ بریکر تیز رفتار موٹر سائیکلوں کے حادثات کو کنٹرول کرنے کے لئے بنائے گئے ہیں۔ لیکن انہی ٹیلے نما سپیڈ بریکروں پر سے ہی موٹر سائیکل سوار اچانک جمپ کھا کر گر جاتے ہیں۔اور انکے پیچھے بیٹھی خواتین کو گرنے سے کافی چوٹیں وغیرہ آتی ہیں۔

ایمرجنسی کے وقت استعمال ہونے والی گاڑیاں ایمبولنس ، پولیس وغیرہ کو چوٹی نما جمپوں کی وجہ سے انتہائی مشکلات کا سامنا کرنا پڑتاہے جس سے سوار زخمی اور بیمار افراد کو ان سپیڈ بریکروں کیوجہ سے بہت دشواری اور تکلیف اٹھانا پڑتی ہے ، جبکہ ان سپیڈ بریکروں کو کسی بھی ریفلیکٹر ٹیپ ،یا کیٹ آئی ریفلیکٹر سے نمایاں نہیں کیا گیا جس سے ناواقف موٹر سائیکل سوار افراد رات کے اندھیرے میں عموماً ان سپیڈ بریکروں کیوجہ سے حادثات کا شکار ہو رہے ہیں۔

شہریوں نے ڈپٹی کمشنر جہلم سے ان غیر قانونی اور بغیر لائحہ عمل کے بنائے گئے سپیڈ بریکروںکو اکھاڑنے کا مطالبہ کیا ہے ۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.