جہلم

وفاقی و صوبائی اداروں میں کام کرنے والے ملازمین مختلف بیماریوں کا شکار

جہلم: وفاقی و صوبائی اداروں میں کام کرنے والے ملازمین مختلف بیماریوں کا شکار ، علاج معالجہ نہ ہونے کے باعث بیشتر ملازمین موذی امراض میں مبتلا ہونے کی اطلاع۔ شہر کی سماجی ، رفاعی ، فلاحی و شہری تنظیموں کے عمائدین کا سرکاری ملازمین کے میڈیکل ٹیسٹ، ہیلتھ سکریننگ اور ان کا علاج معالجہ کروانے کا مطالبہ۔

تفصیلات کے مطابق شہر میں موجود وفاقی و صوبائی اداروں میں کام کرنے والے ملازمین اپنا بروقت علاج معالجہ نہ کروانے کے باعث مختلف قسم کی بیماریوں کا شکار ہو رہے ہیں جس کی بڑی وجہ سرکاری اداروں میں اضافی کام کا بوجھ، ذہنی تناؤ، افسران کی ڈانٹ ڈپٹ ہے۔

ذرائع کے مطابق ملازمین میں پائی جانے والی بیماریوں میں ہیپاٹائٹس بی اور سی ، بلڈپریشر ، شوگر، اعصابی تناؤ ، امراض دل، معدے کے امراض اور یورک ایسڈ وغیرہ شامل ہیں ، یہی وجہ ہے کہ ریٹارئرڈ ہونے والے ملازمین مختلف بیماریوں میں مبتلاہونے کے باعث جلد ہی اللہ کو پیارے ہوجاتے ہیں۔

شہر کی سماجی ، رفاعی ، فلاحی و شہری تنظیموں کے عمائدین نے وزیر اعلیٰ پنجاب، ڈپٹی کمشنر جہلم سے مطالبہ کیا ہے سرکاری اداروں میں خدمات سرانجام دینے والے ملازمین کو آنے والے بجٹ میں سے صحت کی سہولیات فراہم کرنے کے لئے سرکاری ہسپتالوں میں الگ سے کاؤنٹر قائم کئے جائیں جہاں ترجیحی بنیادوں پر سرکاری اداروں کے ملازمین اور ان کے بیوی بچوں کا علاج معالجہ ہو سکے ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button