جہلم

الیکشن مہم اور کارنر میٹنگز میں تیزی، دیہاڑی دار موسمی کارکنان کی موجیں کھابے اور نذرانے شروع

جہلم: الیکشن مہم اور کارنر میٹنگز میں تیزی ،دیہاڑی دار موسمی کارکنان کی موجیں کھابے اور نذرانے شروع، حلقہ بھر میں بڑے بڑے جہازی سائز کے پینا فلیکسزآویزاں کرکے امیدواروں نے الیکشن ضابطہ اخلاق کی دھجیاں بکھیر دیں ، الیکشن کمیشن حکام خاموش۔

تفصیلات کے مطابق عید الفطر کے بعد الیکشن مہم میں تیزی آگئی ،امیدواروں نے اپنے حلقوں میں عوامی رابطہ مہم شروع کر دی ہے، ضلع جہلم قومی اسمبلی کے حلقہ این اے66,67 اور صوبائی اسمبلی کے حلقہ پی پی 25,26,27 شامل ہیں جن میں تحصیل دینہ، تحصیل سوہاوہ، تحصیل پنڈدادنخان سمیت دیگر قصبہ جات اور دیہاتی علاقے شامل ہیں۔

امیدواروں نے اپنے سپورٹرز کو متحرک کرکے ووٹرز کے ساتھ رابطہ مہم تیز کر دی ہیں جبکہ مختلف علاقوں میں اہم برادریوں کی حمایت حاصل کرنے کیلئے بھی زور لگایا جا رہاہے ، امیدواروں نے اپنے جہازی سائز پینا فلیکسز حلقہ بھر کے علاقوں میں آویزاں کروا دیے ہیں۔

الیکشن کمیشن کے ضابطہ اخلاق کے مطابق امیدوار پر پابندی عائد ہے کہ وہ جہازی سائز بڑے پینا فلیکسز نہیں لگا سکتے ، لیکن حسب معمول بااثر امیدواروں نے الیکشن ضابطہ اخلاق کو پس پشت ڈال کر اپنی مرضی سے انتخابی مہم شروع کر رکھی ہے ، تاہم افسوسناک امر یہ ہے کہ الیکشن کمیشن کے افسران نے بھی اس خلاف وزری پر مکمل خاموشی اختیار کررکھی ہے ۔

الیکشن مہم کے ساتھ ہی موسمی اور دیہاڑی دار ورکرز کی موجیں لگ گئی ہیں ، جنہوں نے امیدوارو ں کے ڈیروں اور الیکشن دفاتر میں ڈیرے جما رکھے ہیں، جہاں کھابے چل رہے ہیںاور یہ دیہاڑی دار موسمی کارکنان ہر کارنر میٹنگ اور جلسہ میں نعرے لگانے کے لئے رضاکارانہ طور پر موجود ہوتے ہیں ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button