ضلع بھر میں پرائیویٹ سکولوں کی زائد فیسوں کی لوٹ مار کا سلسلہ عروج پر، انتظامیہ خاموش تماشائی

0

جہلم: شہر سمیت ضلع بھر میں پرائیویٹ سکولوں کی زائد فیسوں کی لوٹ مار کا سلسلہ عروج پر انتظامیہ خاموش تماشائی ،والدین سراپا احتجاج، ڈپٹی کمشنر جہلم سے نوٹس لینے کامطالبہ۔

تفصیلات کے مطابق جہلم شہر سمیت ضلع بھر میں پرائیویٹ سکولوں کے مالکان بچوں کے والدین سے داخلہ فیس ، سالانہ فنڈز، جبکہ بعض سکولوں کے مالکان نے سیشن چارجز کے نام پر نیا ٹیکس عائد کر دیا ہے جو ہزاروں روپے بنتا ہے بٹورے جارہے ہیں۔

والدین نے صحافیوں کو بتایا کہ حکومت کی طرف سے گرمیوں کی چھٹیوں کا اعلان ہوتے ہی سکولوں کالجوں میں زیر تعلیم طلباء و طالبات کو سکولوں کی انتطامیہ کی طرف سے 3 ماہ کی فیسیں یکمشت ادا کرنے کے حوالے سے ہتھکنڈے استعمال کرنے شروع کر دیئے گئے ہیں جس پر سپریم کورٹ آف پاکستان نے پابندی عائد کر رکھی ہے۔

قابل ذکر امر یہ ہے کہ سپریم کورٹ آف پاکستان نے پرائیویٹ سکول مالکان کو گزشتہ برس وصول کی گئیں فیسیں واپس کرنے کے احکامات جاری کئے لیکن بااثر سکول مالکان نے عدالتی احکامات کو ماننے سے صاف انکار کر دیا، اور 3 ماہ کی فیسیں ہضم کرنے میں کامیاب ہو گئے۔

سکولوں کالجوں میں زیر تعلیم طلباء و طالبات اور ان کے والدین نے وزیر اعلیٰ پنجاب، صوبائی وزیر تعلیم ، چیف سیکرٹری پنجاب، سیکرٹری تعلیم ، کمشنر راولپنڈی ، ڈپٹی کمشنر جہلم سے مطالبہ کیا ہے کہ سکولوں مالکان کی طرف سے عائد کئے گئے نئے ٹیکسسز اور یکمشت 3 ماہ کی فیسوں پر پابندی عائد کی جائے تاکہ غریب اور سفید پوش طبقہ سے تعلق رکھنے والے افراد اپنے بچوں کو زیور تعلیم سے آراستہ کر سکیں ۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.