جہلم میں غیر تربیت یافتہ عملہ کی ’’کتے مار مہم‘‘ کیلئے ڈیوٹی کسی بڑے جانی سانحہ کا سبب بننے کا خدشہ

0

جہلم: لوکل گورنمنٹ کے غیر تربیت یافتہ عملہ کی ’’کتے مار مہم‘‘ کیلئے ڈیوٹی کسی بڑے جانی سانحہ کا سبب بن سکتی ہے حکومت پنجاب کے اس پروگرام کے تحت تمام اضلاع میں آوارہ کتوں کو یونین کونسلز کے غیر تربیت یافتہ ملازمین زہر دے رہے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق حکومت پنجاب کی آوارہ کتوں کو زہر دینے کی مہم صوبہ بھر میں جاری ہے جہلم میں بھی تمام میونسپل کمیٹی اور یونین کونسلز میں آوارہ کتوں کو زہر دیا جارہا ہے میونسپل کمیٹی کا عملہ تو اس سلسلہ میں تربیت یافتہ ہے مگر یونین کونسل کے دفاتر کے ملازمین جو کہ غیر تربیت یافتہ ہیں اور ان کو کوئی تربیت نہیں دی گئی اور نہ ہی حفاظتی اقدامات کے حوالہ سے انہیں آگاہی ہے۔

یونین کونسلز کے ملازمین یہ زہر کتے مارنے کے لیے استعمال کررہے ہیں اور یہ انتہائی خطرناک زہر یونین کونسل کے دفاتر میں پڑا ہے،اس کے علاوہ جو ملازمین اس مہم کے لیے کام کررہے ہیں۔

ان ملازمین کی اکثریت کو تو مقدار کا بھی علم نہیں کہ کتنی مقدار میں زہر دینا ہے،بہتر تو یہ تھا کہ میونسپل کمیٹی کے سینٹری ورکرز یا محکمہ صحت کو یہ ڈیوٹی سونپی جاتی کیونکہ وہ اس سے متعلق تربیت یافتہ بھی ہیں اور بہتر طریقے سے اس پروگرام کو عملی جامع پہنا سکتے تھے،یونین کونسلز کے ملازمین کو بغیر تربیت کے کتے مار مہم کے پروگرام کی ڈیوٹی سونپنا ناقابل فہم ہے اور غیر دانشمندانہ فیصلہ ہے۔

عوامی و سماجی حلقوں نے ارباب اختیار سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ اس سلسلہ میں اپنا کردارادا کریں تاکہ کسی بھی جانی حادثہ سے بچا جا سکے۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.