جہلم میں منشیات کا دھندہ دیدہ دلیری سے جاری، بڑے بڑے سفید پوش آئس کے نشہ میں مبتلا

0

جہلم: شہر اور گردونواح میں منشیات کا دھندہ دیدہ دلیری سے جاری، شہر کے بڑے بڑے سفید پوش آئس کے نشہ میں مبتلا ہو گئے، پولیس کی کالی بھیڑیں بھتہ لیکر منشیات فروشوں کی سرپرستی میں مصروف، نوجوان نسل تباہ ہونے لگی،متعدد تعلیمی اداروں میں بھی آئس اور نشہ آوور گولیوں کی خریدو فروخت کے دھندے کا انکشاف، پولیس خانہ پری کے لیے معصوم نشئیوں کو گرفتار کر کے مقدمات کا ٹارگٹ پورا کرنے لگی۔

انتہائی باوثوق ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ جہلم شہر اور گردونواح میں گزشتہ دو سالوں سے آئس نشہ کی خریدو فروخت کا دھندہ دیدہ دلیری سے جاری ہے۔ دھندے میں ملوث ایک کارندے نے نام نہ لکھنے کی شرط پر بتایا کہ آئس کے دھندے میں سرائے عالمگیر کے رہائشی زین،عمیر اور دیگر لوگ شامل ہیں جنہوں نے جہلم میں ٹاہلیانوالہ کے رہائشی ثاقب نامی شخص کو خریدو فروخت کے لیے رکھا ہوا ہے۔

مذکورہ گینگ جہلم شہر گردونواح اور سرائے عالمگیر کے علاوہ دیگر علاقوں میں آئس نشہ کا دھندہ کرتا ہے ذرائع کے مطابق مزکورہ منشیات فروشوں نے مختلف تعلیمی اداروں میں بھی طلباء و طالبات کو اپنے جال میں پھنسا کر آئس نشہ میں مبتلا کیا اور اب انکے ذریعے آئس کا دھندہ کروا رہے ہیں۔

آئس نشہ کے دھندے میں ملوث کارندے نے جہلم شہر کی چند معروف شخصیات کا نام لیتے ہوئے انکشاف کیا کہ یہ معززین بھی آئس نشہ کے عادی بن چکے ہیں، علاوہ ازیں سٹی سرکل میں ہیروئن اور گردا چرس کی خریدو فروخت کا دھندہ بھی پولیس سرپرستی میں دیدہ دلیری سے جاری ہے، ڈی پی او کے حکم کے باوجود بڑے ڈرگ ڈیلروں پر ہاتھ نہیں ڈالا جا رہا، پولیس خانہ پری کے لیے نشئیوں کو گرفتار کر کے نائن سی کے مقدمات درج کر کے جیل بھیج رہی ہے۔

عوامی سماجی اور شہری حلقوں نے اعلی حکام سے مطالبہ کیا ہے کہ نوٹس لیکر منشیات فروشوں کو گرفتار کیا جائے۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.