عید الاضحی پر بیوپاریوں کی لوٹ مار؛ گائے کا چمڑا 300 اور بکر ے کی کھال کا ریٹ 50 روپے مقر ر کر دیا

0

جہلم: عید الاضحی پر بیوپاریوں نے لوٹ مار کی انتہا کردی، گائے کا چمڑا 300اور بکر ے کی کھال کا ریٹ 50روپے مقر ر کر دیا، ہزاروں کھالیں ضائع ، مدارس، فلاحی اداروں کا سالانہ بجٹ بھی حکومت نے چھین لیا۔

تفصیلات کے مطابق نئے پاکستان کے دعوے داروں نے دینی تعلیم دینے اور فلاحی سرگرمیوں میںمصروف اداروں کی فنڈنگ بند کرنے کیلئے سال بعد جمع کی جانی والی کھالوںکو ریٹ اس قدر کم کر دیا کہ ہزاروں کی تعداد میں کھالوں کو دریا برد یا زیر زمین دفن کرنا پڑا۔

حکومتی احکامات کی روشنی میں ڈی سی دفتر کی جانب سے درجنوں تنظیموں پر بے جا اور خود ساختہ اعتراضات لگا کر کھالیں جمع کرنے سے رو ک دیا گیاجبکہ اجازت حاصل کرنے والے اداروں کی دن رات محنت بھی بالکل بیکار گئی جب کھالیں خریدنے والوں نے گائے چمڑا 300اور بکرے کی کھال صرف 50روپے میں ریٹ مقرر کر دیا۔

کھالوں کے ریٹ میں یک دم کمی اور نہ ہونے کے برابر ریٹ کی وجہ سے کھالیں جمع کرنے والوں نے ہزاروں کی تعداد میں کھالیں ضائع کردیں۔

فلاحی تنظیموں کا کہنا ہے کہ ہم سال بھر فلاحی کام کرتے ہیں اور ہماری آمدنی کا واحد ذریعہ سال بعد قربانی کی کھالیں ہوتی ہیں لیکن اس حکومت نے ہمارا یہ سلسلہ بھی بند کر دیا ہے۔ دوسری طرف کھالیں خریدنے والوں کا کہنا ہے کہ بڑے ڈیلرز نے ریٹ ہی اتنے کم کر دئیے ہیں تو ہم مہنگے داموں کیسے خرید سکتے ہیں ۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.