پولیس ہمارے خلاف سیاسی ہتھکنڈے استعمال کر رہی ہے۔ چوہدری ندیم اختر

0

دینہ: پولیس تھانہ منگلا کینٹ میں لا قانونیت کی انتہا ،چوہدری ندیم اختر صدر مسلم لیگ (ن) یوسی مدوکالس کے بھائی وحید اختر کیخلاف جھو ٹی بے بنیاد ایف آئی آر درج کرلی گئی۔

پولیس ہمارے خلاف سیاسی ہتھکنڈے استعمال کر رہی ہے ،پولیس میرے بے گناہ بھائی کے خلاف مقدمہ درج کر کے نا جانے کون سے مقاصد حاصل کرنا چاہ رہی ہے ،پولیس تھانہ منگلا کینٹ آئے روز جھوٹے مقدمات کی بناء پر علاقہ مکینوں کو حراساں کرنے کے درپہ ہے ،چیف جسٹس آف پاکستان ،وزیر اعلی پنجاب ،وزیر اعظم پاکستان پولیس تھانہ منگلا کینٹ میں ہونے والی جھوٹی ایف آئی آر کی تحقیقات کر کے ہمیں انصاف دلائیں۔

ان خیالات کا اظہار پولیس تھانہ منگلا کینٹ کے علاقہ یوسی مدوکالس کے رہائشی چوہدری ندیم اختر صدر مسلم لیگ (ن) یوسی مدوکالس نے مشترکہ پریس کانفرنس میں کیا۔ انہوں نے مزید کہا کہ میں تقریباً 18سال سے بطور صدر مسلم لیگ (ن) یوسی مدوکالس اپنے فرائض منصبی ادا کر رہا ہوں،ہمیں اکثر سیاسی بھینت کا شکار کیا جاتا رہا مگر ہم مسلم لیگ (ن) کے سپاہی ہیں ،چند روز قبل میرا بھائی وحید اختر صبح بچوں کو سکول چھوڑنے گیا منگلا روڈ کے مقام پر میرے بھائی کو پولیس ملازمین امجد اے ایس آئی ،صابر کانسٹیبل نے زبردستی پولیس کی گاڑی میں بٹھا لیا۔

انہوں نے کہا کہ وحید اختر نے فوراً مجھے فون کیا تو میں نے صابر پولیس مین سے بات کی اس نے کہا کہ آپ میرے بھائی ہیں ہم وحید اختر کو تھانے لیکر جا رہے ہیں کسی گاڑی کے بارے میں معلومات لینی ہے مگر جب وہ پولیس تھانہ منگلا کینٹ پہنچے تو پولیس نے فوراً ہی 9Cکا مقدمہ درج کر لیا جب میرے بھائی کو پکڑا گیا وہ منگلا روڈ دینہ کی حدود تھی جسکی فوٹیج اور تصاویر ہمارے پاس موجود ہیں مگر وقوعہ بائی پاس نکودر کا ڈالا گیا

چوہدری ندیم اختر نے کہا کہ جب پولیس نے میرے بھائی کو نا جائز مقدمے میں پکڑا تو اس وقت کے گواہ بھی موجود ہیں جو کہتے ہیں کہ وحید کی جامع تلاشی کے باوجود کچھ نہ ملا مگر پولیس زبردستی اس کو تھانے لے گئی ،DPOجہلم کو معززین علاقہ نے بیان حلفی دیئے مگر کوئی سنوائی نہیں ہوئی ہم حلف دینے کو تیار ہیں کہ وحید اختر بے گناہ ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ تبدیلی نام پربے گناہ لوگوں کو مقدمات میں پھنسا کر کونسی جمہوریت کا واویلا کیا جا رہا ہے ،میرے بھائی کو نا حق گرفتار کر کے بے بنیاد مقدمہ درج کیا گیا ہے میں وزیر اعظم پاکستان ،وزیراعلی پنجاب اور چیف جسٹس پاکستان سے مطالبہ کرتا ہوں کہ اس مقدمے کی انکوائری کروائی جائے ۔

اس سلسلہ میں موقف جاننے کے لئے ایس ایچ او تھانہ منگلا کینٹ سے رابطہ کیا تو انہوں نے کہا کہ ہم نے وحیداختر کیخلاف قانون کے مطابق کاروائی کی ہے ،کسی کو بھی قانون کی خلاف ورزی نہیں کرنے دیں گے ،وحید اختر اور چوہدری ندیم کے ساتھ ہماری کوئی زاتی دشمنی نہ ہے ہم نے ایف آئی آر حق سچ کی بنیاد پر دی ہے ۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.