ضلع جہلم کی محرومیوں کا ازالہ پانی، گیس، نہر، سڑکوں کے منصوبے بہت جلد شروع ہونگے۔ فواد چوہدری

0

جہلم: تحصیل پنڈدادنخان کی محرومیوں کا ازالہ پانی ، گیس ،نہر ، سڑکوں کے منصوبے بہت جلد شروع ہونگے ۔ رسول بیراج تک کندوال نہر کے لئے 37 ارب لِلہ تا جہلم دو رویہ سڑک کے لئے 9 ارب روپے مختص کئے جائیں گے ، ضلع جہلم کے10 ہزار نوجوا نوں کو نوکریاں دیں گے ، انجینئر نگ یونیورسٹی کیمپس میں کلاسوں کا اجراء بہت جلد ہو۔

ان خیالات کا اظہار جہلم کے حلقہ این اے 67 سے کامیاب ہونے والے پاکستان تحریک انصاف کے مرکزی رہنما وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات فواد حسین چوہدری نے جہلم پریس کلب کے عہدیداروں سے ٹیلیفونک گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ تحصیل پنڈدادنخان کی 70سالہ محرومیوں کا جلد ازالہ کیا جائے گا۔

انہوں نے کہا کہ بیراج تا کندوال نہر کی تعمیر کے لیے 37ارب روپے للِہ تا جہلم ون و ے روڈ کی تعمیر کے لیے 9ارب تحصیل پنڈدادنخان کی لیبر کالونی کے لیے 500گھروں کی تعمیرات انجینئرنگ یونیورسٹی ٹیکسلا پنڈدادنخان کیمپس کلاسوں کا جلد اجراء البیرونی ڈگری کالج پنڈدادنخان کرانے کے لیے اقدامات کیے جا رہے ہیں کھیوڑہ میں 240گھروں کو دئیے گئے نوٹس منسوخ کر دیئے گئے ہیں، تحصیل پنڈدادنخان کی تعمیر وترقی کے لیے شب وروز کوشاں ہیں۔

وفاقی وزیر اطلاعات نے ترقیاتی منصوبوں کے بارے میں گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ جہلم کی تحصیل پنڈدادنخان بشمول کھیوڑہ میں پانی کے منصوبے پر جلد کام شروع ہو جائے گا اورکھیوڑہ کے مکینوں کو جاری ہونے والے نوٹسسز موخر کروائے جائیں گے اور ایم ڈی پی ایم ڈی سی خالد سید سے بہت جلد مشاورت کے بعد تمام گھروں کو قانونی حیثیت دلوائی جائے گی ۔

فوادحسین چوہدری نے کہا کہ ہرن پور سے دینہ سوئی گیس کی فراہمی کا سروے کروایا جا رہا ہے جس پراگلے سال کام شروع کردیا جائے گا، پہلے فیزمیں ہرن پور تا جلالپور شریف گیس فراہم کی جائے گی۔

فواد چوہدری نے ضلع جہلم میں صفائی کی صورت حال پر گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ ورلڈ بنک کی مدد سے صفائی کا پائلٹ پراجیکٹ منظور ہو چکا ہے جس کے تحت اگلے 3ماہ میں تحصیل جہلم، تحصیل پنڈدادنخان ، تحصیل دینہ تحصیل سوہاوہ میں مرحلہ وار کام شروع کر دیا جائے گا اور صفائی کے کاموں کو پرائیویٹ ٹھیکیداروں کے سپرد کیا جائے گا۔

وفاقی وزیر اطلاعات نے ضلع جہلم سے بیروزگاری کے خاتمے کے حوالے سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ نہر ،سڑک ، لیبر کالونی و دیگر منصوبہ جات کی تعمیر سے جہاں سینکڑوں نوجوانوں کو روزگارملے گا وہیں پاکستان ٹوبیکو کمپنی جہلم، آئی سی آئی سوڈا ایش کھیوڑہ و دیگر صنعتی اداروں کو متنبہ کر دیا گیا ہے کہ وہ ضلع جہلم کے عوام کے لیے 33% فیصد بھرتی کے کوٹہ کو یقینی بنائیں۔

انہوں نے کہا کہ1 لاکھ نوکریوں کا پاکستان اور قطر گورنمنٹ کے مابین معاہدہ ہو رہا ہے جس میں سے ضلع جہلم کے لیے 8 ہزار سے10 ہزار نوکریوں کو یقینی بنایا جائے گا ملائیشیا کوسیکورٹی گارڈز بھیجنے کا معاہدہ کیا جا رہا ہے اس مد میں بھی ضلع جہلم کی عوام کو 2 ہزارسے3 ہزار نوکریاں میسر ہوں گی۔

وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات فوادحسین چوہدری نے کہا کہ ضلع جہلم کے زیرزمین آ بی ذخائر کو استعمال کرنے والے صنعتی اداروں کو چیف جسٹس آف پاکستان میاں ثاقب نثار کے طے کردہ ٹیرف کے مطابق پانی کا معاوضہ کی ادائیگی کو یقینی بنایا جائے گا۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.