جہلماہم خبریں

ڈائریکٹر کالجز ان ایکشن،گورنمنٹ کالج آف کامرس جہلم کے پرنسپل کو عہدے سے ہٹا دیا

جہلم: ڈائریکٹر کالجز ان ایکشن ،گورنمنٹ کالج آف کامرس جہلم کے پرنسپل کو عہدے سے ہٹا دیا، پروفیسر طارق عزیز کا بطور پر نسل گورنمنٹ کالج آ ف کامرس جہلم نوٹیفکیشن جاری ،طلباء اور میں خوشی کی لہردوڑ گئی۔

تفصیلات کے مطابق گزشتہ ایک ماہ سے گورنمنٹ کالج آف کامرس جہلم کے پرنسپل نعیم چوہدری کی ریٹائرمنٹ کے بعد جب سے بطور پرنسپل واحد علی نے چارج سنبھالا تو کالج کا پرامن ماحول بری طرح متاثر ہوا اساتذہ کو بلا جواز ذہنی ٹارچر کرنے، طلباء کو اساتذہ کے خلاف اکسانے ،تعلیمی ماحول کو خراب کرنے پر، طلباء کے والدین اور جہلم کے سماجی حلقوں کی مداخلت پرڈائریکٹر کالجز راولپنڈی نے واحد علی کو پرنسپل کے عہدے سے ہٹانے کا فیصلہ کرتے ہوئے آرڈر جاری کر دیئے ،مگر مذکورہ پرنسپل نے ڈائریکٹر کالجز راولپنڈی کے احکامات کو ماننے سے انکار کر دیا۔

اس تمام تر صورت حال کو کنٹرول کرنے کے لئے جب ڈپٹی ڈائریکٹر کالجز جہلم گورنمنٹ کالج آف کامرس پہنچے اور واحد علی کو طارق عزیز کو پرنسپل کا چارج دینے کے لیے کہا توذرائع کے مطابق انہوں نے ڈپٹی ڈائریکٹر کالجز جہلم سے بدتمیزی کی ان پر جھپٹ پڑے ماسک اتار دیا اور موبائل فون چھین لیا اور سنگین نتائج کی دھمکیاں دیں اور دو دن کی رخصت پر چلے گئے۔

ڈپٹی ڈائریکٹر کالجز جہلم نے پروفیسر طارق عزیزکو ڈائریکٹر کالجز کے آرڈرز کے مطابق ذمہ داریاں نبھانے کی ہدایت کی تاکہ طلباء کی تعلیم کا حرج نہ ہو اور اساتذہ بھی اپنے فرائض احسن طریقے سے سر انجام دے سکیں ،گورنمنٹ کالج آف کامرس کے اساتذہ نے واحد علی کے غیراخلاقی رویہ پر مذمت کی اور قرارداد مذمت پر دستخط کروائے اور شدید غم و غصہ کا اظہار بھی دیا۔

یاد رہے کہ پروفیسر طارق عزیز ا سی کالج کے سیشن 1982ء کے سابقہ طالبعلم بھی ہیں۔ ان کے والد پروفیسر مقصود احمد(مرحوم) بھی اسی کالج کے پرنسپل رہ چکے ہیں۔ جہلم کے سماجی اور عوامی حلقوں نے پروفیسر طارق عزیز کے پرنسپل تعینات ہونے پر اْنھیں دلی مبارک باد دی ہے۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button