جہلم

تھانہ سول لائن کے علاقوں میں کھلے عام منشیات کی فروخت کا دھندہ جاری، پولیس خاموش تماشائی

جہلم: تھانہ سول لائن کے علاقوں میں کھلے عام منشیات کی فروخت کا دھندہ جاری، تھانہ سول لائن پولیس خاموش تماشائی، متعدد علاقے ایک بار پھر منشیات کا گڑھ بن گئے۔

نشئییوں کا کہنا ہے کہ اسلام پورہ، شمالی محلہ، ملاح محلہ منشیات فروشوں کے ڈپوؤں میں تبدیل ہو چکے ہیں، جس کی وجہ سے بیشتر علاقوں کے نوجوان منشیات کے عادی بننے کے ساتھ ساتھ سٹریٹ کرائم میں بھی ملوث ہونے لگے ہیں۔ پولیس کی جانب سے منشیات فروشوں کی مبینہ سرپرستی، سینکڑوں نوجوان منشیات اور چوری چکاری کے عادی ہوتے جارہے ہیں ۔ تھانہ سول لائن کی حدود میں موجود ان علاقوں میں منشیات فروشی کا دھندہ عروج پکڑنے لگا۔

شہر و گردونواح کے صحت مند نوجوان نشے کی لت میں مبتلا ہو کر زندہ لاشیں بنتے جارہے ہیں۔ متعلقہ تھانے کے ملازمین سمیت ، محافظ سکوارڈ کے اہلکار منشیات فروشوں کی پشت پناہی اور منشیات کے عادی افراد سے مال بٹورنے میں مصروف عمل ۔ منشیات فروشوں سے بھی بھتہ وصولی اور منشیات استعمال کرنے والوں سے بھی رقم چھین لی جاتی ہے۔

نشہ خریدنے والے نشئیوں کا کہنا ہے کہ منشیات فروخت کرنے والے افراد کی تعداد اتنی زیادہ ہو چکی ہے کہ گنتی نہیں کی جا سکتی نشے کے مقام پر ایک وقت میں درجنوں سے زائد افراد نشہ کرتے دکھائی دیتے ہیں۔ منشیات فروشوں نے متعلقہ تھانے کے ذمہ داران سے معاملات طے کر رکھے ہیں جس کی وجہ سے منشیات فروشوں کو کوئی پوچھنے والا نہیں ۔

شہر کی سماجی رفاعی، فلاحی، مذہبی تنظیموں کے عمائدین کا کہنا ہے کہ جگہ جگہ فروخت ہونے والا یہ زہر پولیس کے ساتھ ساتھ اینٹی نارکوٹکس فورس اور دیگر متعلقہ اداروں کی کارکردگی پر سوالیہ نشان ہے۔شہریوں نے آئی جی پنجاب، آرپی او راولپنڈی ، ڈی پی او جہلم شاکر حسین داوڑ سے منشیات فروشوں کے خلاف سخت کارروائی کرنے کا مطالبہ کیا ہے ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button