جہلم

محرم الحرام شروع ہوتے ہی شہری اپنے پیاروں کی قبروں کی لپائی کرنے میں مصروف ہوگئے

جہلم: شہر و گردونواح میں محرم الحرام شروع ہوتے ہی شہری اپنے پیاروں کی قبروں کی لپائی کرنے میں مصروف ہوگئے ، جبکہ بیشتر قبرستانوں میں پانی اور مٹی کی عدم دستیابی کے باعث لپائی کرنیوالوں کو مشکلات کا سامنا ہے ،متعدد قبرستانوں کی چاردیواری نہ ہونے سے قبروں کو شدید نقصان پہنچ رہا ہے۔

تفصیلات کے مطابق جہلم شہر کے مرکزی قبرستان سمیت ملحقہ علاقوں میں قائم قبرستانوں میں انتظامیہ کی عدم دلچسپی کے باعث بیرونی دیواریں ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہو چکی ہیں بیشتر قبرستانوں میں نشئیوں نے ڈیرے ڈال رکھے ہیں جہاں رات گئے سے علی الصبح تک منشیات فروشی کا دھندہ کرنے والے بااثر منشیات فروش اپنے مورچے قائم کرکے مکروہ دھندہ جاری رکھے ہوئے ہوتے ہیں۔

انتظامیہ کی عدم توجہی کے باعث درجنوں قبروں کے نام و نشان صف ہستی سے مٹ چکے ہیں اور شہریوں نے قبرستان میں مختلف اطراف سے از خود راستے بنا لئے ہیں ،مرکزی قبرستان کے اطراف میں بااثر افراد نے مویشی باندھ رکھے ہیں جس کی وجہ سے شہر خاموشاں کی بے حرمتی کی جارہی ہے جب کہ جانوروں کی آمدورفت کے باعث متعدد قبریں مسمار ہو چکی ہیں۔

جہلم کی مذہبی ، سماجی ، رفاعی ، فلاحی ، شہری تنظیموں کے عمائدین نے اعلیٰ حکام سے اندرون شہر اور ملحقہ آبادیوں میں موجود قبرستانوں کی چار دیواری کی تعمیر کروانے اور قبرستان کے لئے اراضی مختص کرانے کا مطالبہ کیاہے ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button