جہلم

ایرانی ٹماٹر درآمد ہونے کے باوجود قیمتوں میں کمی نہ آسکی، آلو پیاز کے بھی مہنگے دام بدستور برقرار

جہلم: ایرانی ٹماٹر درآمد کے باوجود قیمتوں میں کمی نہ آسکی ،سرکاری نرخ ناموں میں ٹماٹر 215روپے کلومقرر کرنے کے باوجود مارکیٹ میں 290روپے فی کلو فروخت کیاجاتا رہا جبکہ آلو پیاز کے مہنگے دام بدستور برقرار ہیں ۔پیاز 78کے بجائے 100روپے کلو ،آلو60کے بجائے 80روپے فی کلو فروخت کیا جاتا رہا ۔
اسی طرح دیگر اشیائے ضروریہ دالیں ،گھی اورکوکنگ آئل کی قیمتیں بھی ایک ماہ کے دوران دو سے تین مرتبہ بڑھائی جاچکی ہے اور مہنگائی سے عوام کا جینا دو بھر ہوگیا جبکہ دوسری جانب عوام کو سستی اشیاء صرف مہیا کرنے اور سبسڈی دینے کے حوالے سے بنائے گئے یوٹیلیٹی سٹورز بھی آخری سانسیں بھر رہے ہیں ۔
ضلع بھر کے یوٹیلیٹی سٹورز پر نہ تو گھی ہے نہ چینی اور دیگر سبسڈیز اشیاء موجود ہیں اب ا گر یوٹیلیٹی سٹورز کو سفید ہاتھی کہا جائے تو غلط نہ ہوگا ۔ سبزیوں سمیت دیگر اشیاء صرف اتنی مہنگی ہوگئی ہیں کہ عام خریدار کے لئے تو اب ایک وقت کا بھی کھانا مشکل ہوگیا ہے سبزیوں کے حوالے سے ٹماٹر کی دوڑقیمتیں سب سے آگے ہے ایرانی ٹماٹر آنے کے باوجود قیمتوں میں کمی نہ لائی جا سکی۔
سرکاری نرخ ناموں میں ٹماٹر215روپے کلو مقرر کرنے کے باوجود مارکیٹ میں 290روپے فی کلوفروخت کیاجارہا ہے ،اسی طرح آلو اور پیاز کے بھی مہنگے دام بدستور برقرارہیں ۔پیاز 78روپے کلو کے بجائے100روپے کلو میں فروخت ہورہا ہے ۔
آلو 60روپے فی کلو کے بجائے 80روپے فی کلو فروخت کیا جارہا ہے جبکہ دوسری جانب عوام سستی اشیاء صرف مہیا کرنے اور سبسڈی دینے کے حوالے سے بنائے گئے یوٹیلیٹی سٹورز بھی آخری سانسیں بھر رہے ہیں ، مہنگائی سے ستائے عوام شدید ذہنی کوفت میں مبتلا ہیں ۔
گھریلو خواتین نے گفتگو کر تے ہوئے کہا کہ کیا کھائیں اور کیا پکائیں ایک ماہ میں تین تین مرتبہ تو چیزوں کی قیمتوں میں اضافہ ہورہا ہے ، شہریوں نے وزیر اعظم پاکستان عمران خان سے مطالبہ کیا ہے کہ خدارامہنگائی کے اس جن کو قابو کر کے بوتل میں بند کیا جائے تاکہ غریب عوام 2 وقت کا کھانا اپنے بیوی بچوں کو مہیا کر سکیں ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button