جہلم

تھانہ اینٹی کرپشن جہلم میں بدعنوانی کی درخواستیں قانونی مشاورت میں تاخیر کا شکار، سائلین پریشان

جہلم: تھانہ اینٹی کرپشن کے سائلین پریشان، بدعنوانی کی درخواستیں قانونی مشاورت میں تاخیر کا شکار، سائلین حصول انصاف کے لئے دربدر ،ڈی جی اینٹی کرپشن سے نوٹس لینے کا مطالبہ۔

تفصیلات کے مطابق تھانہ اینٹی کرپشن جہلم میں سائلین کی طرف سے دی جانے والی درخواستوں پر کارروائی کی بجائے تاخیری حربے استعمال کئے جا رہے ہیں۔

بیشتر سائلین نے اخبار نویسوں سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ جہلم تھانہ اینٹی کرپشن دفتر میں دی جانے والی درخواستیں ردی کی ٹوکری کی نظر کر دی جاتی ہیں ، جبکہ متعدد درخواستوں کا سائلین کو وجوہات بتائے بغیر ہی داخل دفتر کر دیا جاتا ہے ۔

کنتریلہ جہلم کے رہائشی عبدالغفار نے بتایا کہ کم از کم 1 سال قبل تھانہ اینٹی کرپشن جہلم میں درخواست دی جس کا انہوں نے ڈائری نمبر دے دیا اس کے بعد میری درخواست راولپنڈی بھجوا دی گئی ، اور مجھے ڈائری نمبر دے کر مطمئن کر دیا گیا، میرے بار بار دریافت کرنے پر تھانہ اینٹی کرپشن کے محرر نے بتایا کہ آپ کی درخواست اینٹی کرپشن راولپنڈی میں تعینات عتیق الرحمٰن کے پاس موجود ہے انہیں کے حکم پر کارروائی ہونی ہے۔

متاثرہ شخص نے بتایا کہ میں نے ایک سو ایک مرتبہ عتیق الرحمن کے فون نمبر 0519272532 پر رابطہ کرنے کی کوشش کی پہلے تو اس فون کو ایٹنڈ کرنے والا کوئی ملازم موجود ہی نہیں اور اگر خدانخواستہ کوئی ٹیلیفون اٹینڈ کر لے تو وہ بتاتے ہیں کہ فی الحال عتیق الرحمن صاحب دفتر نہیں پہنچے اس طرح 365 دن سے زائد کا عرصہ گزرجانے کے باوجود میری درخواست آج بھی عتیق الرحمن کی نظر کرم کی منتظر ہے۔

شہریوں کا کہنا ہے کہ محکمہ مال ، محکمہ صحت، محکمہ ماحولیات، آرٹی اے سیکرٹری ، موٹر وہیکل ایگزامینر، میونسپل کارپوریشن ، محکمہ تعلیم سمیت دیگر اداروں کے خلاف شہریوں کی طرف سے درجنوں شکایات محض اس لئے التوا ء کا شکار ہیں کہ تھانہ اینٹی کرپشن جہلم میں ملزمان سے زیادہ سائلین کی تذلیل کی جاتی ہے ۔

تھانہ اینٹی کرپشن میں ملزمان اور سائلین کو صبح سویرے طلب کر لیا جاتا ہے پورا دن زلیل وخوار کرنے کے بعد سہ پہر کے وقت بتایا جاتا ہے کہ آج سرکل آفیسر راولپنڈی میں مصروف تھے آئندہ تاریخ کے بارے ٹیلیفون پر اطلاع دی جائیگی ۔

تحصیل پنڈدادنخان کی یونین کونسل کندوال اور تحصیل سوہاوہ کی یونین کونسل پڑی درویزاں سینکڑوں میل کا سفر کرکے آنے والے سائلین کو جب حصول انصاف کے لئے چکر لگانا پڑیں گے تو سائلین شکایت کرنے کی بجائے خاموشی کو ترجیح دیں گے، ضلع جہلم کے سائلین نے ڈائریکٹر جنرل اینٹی کرپشن پنجاب محمد گوہر نفیس سے نوٹس لینے اور جہلم تھانہ اینٹی کرپشن میں نافذ جنگل کے قانون کے خاتمے کامطالبہ کیا ہے ۔

شہریوں نے وزیراعلیٰ پنجاب، چیف سیکرٹری پنجاب سے مطالبہ کیاہے کہ ڈی جی اینٹی کرپشن کو جہلم شہر میں کھلی کچہری لگانے کا پابند بنایا جائے تاکہ سرکاری اداروں میں ہونے والی کرپشن کا خاتمہ ممکن ہو سکے۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button