جہلم

مشین محلہ جہلم میں اضافی وولٹیج کے باعث الیکٹرانک مصنوعات دھواں مارنے لگیں

جہلم: شہر کے گنجان آباد علاقہ مشین محلہ میں اضافی وولٹیج کے باعث الیکٹرانک مصنوعات دھواں مارنے لگیں۔شہریوں کا آئیسکواربن سب ڈویژن کے خلاف شدید احتجاج ، چیف جسٹس آف پاکستان ،وفاقی وزیر پانی و بجلی سے نوٹس لینے کا مطالبہ۔

تفصیلات کے مطابق جہلم شہر کے گنجان آباد علاقہ مشین محلہ نمبر 2 میں پچھلے کئی ماہ سے بجلی کے وولٹیج میں اضافے کے باعث شہریوں کی الیکٹرانک مصنوعات گرم ہو نے سے جل کر خاکستر ہو رہی ہیں شہریوں نے آئیسکو اربن سب ڈویژن کوذمہ دار قرار دیتے ہوئے چیف انجینئر آئیسکو جہلم سے نوٹس لینے کا مطالبہ کیاہے۔

شہریوں کا اس حوالے سے کہنا ہے کہ وولٹیج میں اضافے کی وجہ سے صارفین کو جہاں کئی گنا زیادہ بل ادا کرنا پڑرہے ہیں وہیں الیکٹرونکس مصنوعات کا ناکارہ ہونا معمول بن گیا ہے، واپڈا آئیسکواربن سب ڈویژن کی ناقص حکمت عملی کی وجہ سے پورا علاقہ اضافی وولٹیج کی لپیٹ میں ہے،،زائد وولٹیج سے جہاں صارفین کو بل میں ہزاروں روپے اضافی بوجھ برداشت کرنا پڑرہا ہے وہی گھروں میں استعمال ہونے والی الیکٹرک اور الیکٹرونکس مصنوعات کا ناکارہ ہونا معمول بن گیا ہے۔

عوامی ، مذہبی ، فلاحی، رفاعی تنظیموں کے عمائدین نے حکام بالا سے مطالبہ کیا ہے کہ آئیسکو واپڈا اربن سب ڈویژن میں ایسا عملہ تعینات کیا جائے جو عوام کو درپیش مسائل کے حل میں موثر اور معاون ثابت ہو سکے۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button