سوہاوہ میں تجاوزات کیخلاف بڑا آپریشن، راجہ اویس خالد کا پٹرول پمپ اور لیگی سیکرٹریٹ مسمار

مسلم ن لیگ کے سیکرٹریٹ کو مسمار کرکے سیاسی انتقام کا نشانہ بنایا گیا، اویس خالد

0

سوہاوہ: این ایچ اے کا سوہاوہ میں تجاوزات کے خلاف بڑا آپریشن ، سابق ایم پی اے راجہ اویس خالد کا پٹرول پمپ مسمار ، سابق ایم پی اے کا پٹرول پمپ کے ساتھ مسلم لیگ کا سیکرٹریٹ آفس بھی تھا ۔ مسلم ن لیگ کے سیکرٹریٹ کو مسمار کرکے سیاسی انتقام کا نشانہ بنایا گیا، اویس خالد۔ لیز کی فیس ادا نہ کرنے پر پٹرول پمپ اور سیکرٹریٹ کو مسمار کیا گیا۔این ایچ اے

تفصیلات کے مطابق سوہاوہ میں این ایچ اے کے ڈپٹی ڈائریکٹر نے تجاوزات کے خلاف آپریشن میں سوہاوہ جی ٹی روڈ پر واقع سابق مسلم لیگی ایم پی اے راجہ اویس خالد کا پٹرول پمپ اور مسلم لیگ ن کا سیکرٹریٹ آفس کو مسمار کر دیا گیا، مسمار کیا گیا پٹرول پمپ 1964 ء سے مسلم لیگ ن کا مرکزی سیکرٹریٹ آفس تھا ۔

پاکستان تحریک انصاف کی حکومت نے پنجاب بھر میں تجاوزات کے خلاف گرینڈ آپریشن کا حکم دیا تو سوہاوہ میں سابق اسسٹنٹ کمشنر کے تاجروں اور شہریوں سے مذاکرات کے بعد تمام تجاوزات کو از خود ہٹا دیا گیا اور بغیر آپریشن بازار سے تجاوزات کا خاتمہ کیا گیا۔

جی ٹی روڈ پر واقع مسلم لیگ ن کے سابق ایم پی اے راجہ اویس خالد کے پمپ کو این ایچ اے کی اعلیٰ احکام کی طرف سے لکھے گئے لیٹر پر مسمار نہ کیا گیا کہ اس پمپ کی لیز کی ری نیول کی درخواست پر کاروائی التواء کا شکار ہے جس کے بعد سابق اسسٹنٹ کمشنر سوہاوہ کو سیاسی مداخلت پر تبدیل کر دیا گیا۔

سابق اسسٹنٹ کمشنر کے خلاف وزیر اعلیٰ پنجاب کی طرف سے ایک بیان بھی دیا گیا کہ انہیں غریبوں کے گھر مسمار کرنے پر معطل کر دیا گیا لیکن نئے اسسٹنٹ کمشنر کی تعیناتی کے بعد این ایچ اے کے ڈپٹی ڈائریکٹر نے سیاسی دباؤ کے بعد سابق ایم پی اے راجہ اویس خالد کے مرکزی دفتر اور پٹرول پمپ کو بھاری مشینری کے ذریعے مسمار کر دیا

سابق ایم پی اے راجہ اویس خالد نے پٹرول پمپ اور مسلم لیگ ن کا سیکرٹریٹ مسمار کرنے کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے میڈیا کو بتایا کہ 1962 میں پنجاب گورنمنٹ سے یہ جگہ لیز پر لے کر مسلم لیگ ن کا مرکزی آفس بنوایا گیا تھا جس کے بعد اس پر پمپ تعمیر کیا گیا اور 2006 سے این ایچ اے کے آفس میں لیز کی ری نیول کے لئے درخواست پڑی ہوئی ہے۔

انہوں نے کہا کہ اگر میں نے غیر قانونی تعمیرات یا تجاوز کرنا ہوتی تو پانچ سال ایم پی اے اور پارلیمانی سیکرٹری رہا چار بار میرے والد راجہ خالد خان مرحوم ایم پی اے و صوبائی وزیر رہے درجنوں بار سابق وزیر اعظم اور وزیر اعلیٰ میرے گھر آئے تب یہ جگہ اپنے نام کروا لیتا ۔

راجہ اویس خالد نے کہا کہ مجھے سیاسی انتقام کا نشانہ بنایا گیا ہے اور بغیر کسی نوٹس کے میرے آفس کو مسمار کر کے میری ساکھ کو نقصان پہنچانے کی کوشش کی گئی ہے جس کے خلاف قانونی چارہ جوئی کرونگا اور انشاء اللہ جلد پریس کانفرنس کر کے انتقامی کاروائی کے تمام ثبوت دونگا۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.