جہلم

جہلم شہر سمیت ضلع بھر میں پٹواریوں نے اپنے دفاتر میں پرائیویٹ منشی رکھنے پر پابندی کو ہوا میں اڑا دیا

جہلم: شہر سمیت ضلع بھر میں پٹواریوں نے اپنے دفاتر میں پرائیویٹ منشی رکھنے پر پابندی کو ہوا میں اڑا دیا۔

ہائیکورٹ کا حکم نامہ بھی ردی کی ٹوکری کی نظر ہوگیا، پٹواریوں نے دیدہ دلیری کے ساتھ پرائیویٹ منشی رکھے ہوئے ہیں ،ایک پٹواری کے پاس3/4 منشی موجود ہیں ، مختلف علاقوں میں بااثر پٹواریوں نے دفاترقائم کرکے پرائیویٹ منشیوں کے ذریعے مال بٹورنا شروع کر رکھا ہے جو کہ خفیہ اداروں کی کارکردگی پر سوالیہ نشان ہے ۔

سائلین کا پٹواریوں سے ملنا مشکل ہی نہیں بلکہ ناممکن ہو چکا ہے، پٹواری صرف چند مخصوص افراد کا فون موصول کرتے ہیں باقی سائلین کا فون سننا پٹواری اپنی توہین سمجھتے ہیں ۔ دوسری جانب پٹواری نجی ہوٹلوں کے کمروں میں اے سی لگا کر ٹھنڈے کمروں میں بیٹھ کر مخصوص افراد کے فونز پر منشیوں کو احکامات جاری کرکے کام کررہے ہیں ۔

انتہائی باوثوق ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ منشیوں کے پاس فرد پر پٹواریوں کے دستخط موجود ہوتے ہیں لکشمی ادا کرنے والے سائلین کو منشی فرد تیار کرکے تھما دیتے ہیں۔

سائلین نے ہائی کورٹ سے مطالبہ کیاہے کہ خفیہ اداروں سے سروے کروایا جائے اور پٹواریوں کو گنجان آباد علاقوں میں دفاتر قائم کرنے کی بجائے ایسے مقامات پر دفاتر قائم کرنے کا پابند بنایا جائے جہاں شہریوں کی رسائی ممکن ہو اور سائلین باآسانی زمینوں کے معاملات پٹواریوں کے ذریعے حل کروا سکیں ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button