سوہاوہانٹرویوزاہم خبریں

پی ٹی آئی نے2018ء کے الیکشن میں میرے ساتھ بہت زیادتی کی۔ چوہدری محمد ثقلین

سابق ایم پی اے چوہدری محمد ثقلین ضلع جہلم کی تحصیل سوہاوہ تھانہ ڈومیلی کی یونین کونسل کوہالی کے گاؤں بروالہ لبانہ ہیل کے رہائشی ہیں،چاربارایم پی اے سوہاوہ رہ چکے ہیں۔

چوہدری محمد ثقلین نے مسلم لیگ ن میں شامل ہونے کے بعد جہلم اپڈیٹس کو پہلا انٹرویو دیتے ہوئے کہا کہ 1987ء میں ڈسٹرکٹ لیول کاکونسلر بنا،اپنے علاقے کی عوام کی امیدو پر پورا اترا علاقائی مسائل کو حل کرنے کیلئے خصوصی توجہ دی، میں نے عمران خان کا ساتھ اس وجہ سے دیا کہ وہ خود گریٹ لیڈر ہے لیکن انکے ساتھ جو لگے ہوئے ہیں وہ سب کریٹ ہیں،جن کی وجہ سے عمران خان نے اپنی پارٹی کا کافی نقصان کیا۔

سابق ایم پی اے نے کہا کہ میرے ساتھ2018ء کے الیکشن میں پی ٹی آئی نے بہت زیادتی کی، جوجہلم سے سابق ناظم رہے وہ بہت بڑامافیاتھا اور لدھڑ اور دینہ جلسہ بھی ہوا لیکن میرا دینہ والا جلسہ کامیاب رہا جس کو عمران خان نے بھی خود ماناتھا،آخرتک مجھے اعتماد میں لیے رکھاکہ آپ کا ٹکٹ کنفرم تھالیکن اچانک مجھے دھوکا دے کر لدھڑ خاندان میں دے دیا۔

انہوں نے کہا کہ میرے بھائی کرنل (ر) محمدتاج مرحوم نے مجھے ایم این اے کا الیکشن لڑنے کا کہاتھا،میرے خلاف جھوٹا درج کراکر سزا دلوادی۔ میرے خلاف بہت کارروائیاں کی گئیں، مجھے بہت کہاگیاکہ آپ پی ٹی آئی کے ٹکٹ پر ایم پی اے کا الیکشن لڑلیتے لیکن ساتھیوں کا یہی فیصلہ تھا کہ ایم پی اے کے ٹکٹ پر نہ لڑیں۔

چوہدری محمد ثقلین نے کہا کہ مجھے مسلم لیگ ن میں شامل ہونے کیلئے جنرل (ر) اظہر کیانی،چوہدری خادم حسین اور چوہدری ندیم خادم نے رابطہ کافی عرصے سے کررہے تھے۔ میں نے کسی شرط پر مسلم لیگ ن کو جوائن نہیں کیا،مسلم لیگ ن میں شامل ہوا ہوں جو فیصلہ پارٹی کرے گی مجھے قبول ہوگا۔

انہوں نے کہا کہ جہلم میں مسلم لیگ ن کی قیادت ایک پیج پر کھڑی ہے،مسلم لیگ ن جہلم کی قیادت میں کسی قسم کی کوئی دراڑیں یا اختلافات نہیں ہیں۔ مسلم لیگ ن میں شامل ہونے سے پہلے تمام ورکروں اور ڈومیلی کی عوام کو اعتماد میں لے کر شامل ہوا۔

سابق ایم پی اے چوہدری محمد ثقلین نے انٹرویو میں کہا کہ 2018ء کے الیکشن میں اگرمیں ایم پی اے کا ٹکٹ لے لیتاتو ساتھیوں کے ساتھ بھی زیادتی تھی،میراضمیرنہیں ماناکہ سب کوچھوڑ کرٹکٹ لے لیتا۔ میں نے ایم پی اے راجہ یاورکمال کو سیکھانے کی کوشش کی،راجہ یاور کمال کیساتھ دھوکا نہیں کیا، راجہ یاورکمال سیاستدان نہیں بناصرف ایم پی اے بنا۔

چوہدری ثقلین نے کہا کہ لدھڑ خاندان کسی دوسروں کو نہیں مانتے ان کا یہی مقصد ہوتاہے سب کچھ ہمارے پاس رہے، اپنے حلقے میں کوئی دوسرا نہ ہو، چوہدری فرخ الطاف کے خلاف نیب میں مقدمات ہیں، چھاپے بھی پڑے اس میں دیگر افسران بھی شامل تھے۔

انہوں نے کہا کہ میں کرنل (ر) محمدتاج (مرحوم) کے نقشے قدم چلوں گا۔ چوہدری محمدامجد ہمارے پیارے ساتھی ہیں ان کا تعاون بڑا ہے، میرے ساتھ شانہ بشانہ کھڑے ہیں۔ اگرمیرے ساتھ دوسری پارٹیوں کی نمائندے رابطہ کرتے تو انکے بارے میں بھی سوچاجاتا لیکن کسی نے رابطہ نہیں کیا۔

سابق ایم پی اے نے کہا کہ مسلم لیگ ن کو اس حکومت نے بہت ڈرایا دھمکایالیکن ن لیگی قیادت کسی سے گھبرانے والی نہیں۔ جیلوں میں ڈالاگیاجھوٹے مقدمات درج کئے گئے لیکن حوصلے بلندہیں۔ نیب نے بھی تفتیش کی لیکن ایک روپے کی کرپشن ثابت نہ کرسکے۔ سینٹ الیکشن میں بڑی منصوبہ بندی کے ساتھ ہرایاگیا۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button