سوہاوہاہم خبریں

سوہاوہ چکوال روڈ دو رویہ منصوبہ مکمل ہونے کے باوجود عوام کی سفری مشکلات کم نہ ہو سکیں

پڑی درویزہ: سوہاوہ چکوال روڈ دو رویہ منصوبہ مکمل ہونے کے باوجود عوام کی سفری مشکلات کم نہ ہو سکیں، چند بااثر شخصیات کی وجہ ویگن سروس تحصیل سوہاوہ کی حدود اڈہ جھیک تک بھی نہیں بڑھایا جا سکتا ۔عوامی سماجی حلقوں کی طرف سے ڈپٹی کمشنر ضلع جہلم اور اے سی تحصیل سوہاوہ کو صورت حال کا نوٹس لیکر مسئلہ حل کرنے کا مطالبہ ۔

تفصیلات کے مطابق سابق وزیر اعظم پاکستان راجہ پرویز اشرف کی طرف سے سوہاوہ تا چکوال دو رویہ سڑک کا منصوبہ ایک بڑے تحفہ سے کم نہیں ہے ۔ کئی عروج و زوال کے بعد یہ منصوبہ اپنے آخری مراحل طے کر رہا ہے لیکن سوہاوہ تا اڈہ جھیک کے مسافروں کی سفری مشکلات آج بھی وہی ہیں ایک گاڑی کے انتظار کے لیے گھنٹوں انتظار کرنا ایک معمول بن چکا ہے ۔

سوہاوہ سے لوکل ویگن سروس موجود ہے لیکن چند بااثر شخصیات اور ٹرانسپورٹروں کی وجہ سے لوکل ویگن سروس کا روڈ سوہاوہ سے اڈہ جھیک تک بڑھایا نہیں جا سکتا ۔ ہر روز سینکڑوں خواتین و حضرات اساتذہ سوہاوہ اور مختلف سکولوں کے لیے سفر کرتے ہیں ۔

سوہاوہ سے اڈہ جھیک تک صرف34کلو میٹر سفر کا ٹیوٹا ہائی ایس والے 100/-روپیہ تک کرایہ وصول کرتے ہیں اسی طرح مختلف اڈوں پر خود ساختہ بھتہ خور اڈہ پرچی کے نا م پر بلا وجہ گاڑیوں سے ٹیکس کے نام پر بھتہ وصول کر تے ہیں نیزٹرانسپورٹروں کی اجارہ داری کی وجہ مسافروں سے اچھا برتاؤ بھی نہیں کیا جاتا ۔

علاقہ بھر کے عوامی سماجی حلقوں خصوصاً روز مرہ سفر کرنے والے مرد و خواتین اساتذہ اور طلباء و طالبات نے ڈپٹی کمشنر ضلع جہلم اور اسسٹنٹ کمشنر تحصیل سوہاوہ ذوالفقار احمد نے مطالبہ کیا ہے کہ وہ بیان بالا صورت حال کو خود جائزہ لے کر مسئلہ کو حل کرتے ہوئے لوکل ویگن سروس کا روٹ سوہاوہ سے اڈہ جھیک تک بڑھانے کے اقدامات کریں کیونکہ عرصہ سے تحصیل ہیڈ کوارٹر ہونے کے باوجود سوہاوہ میں ڈی ایس پی ٹریفک کا دفتر تک قائم نہیں ہو سکا ۔

اس سلسلے میں عوامی سماجی حلقوں نے سیکریٹری آر ٹی اے کو متوجہ کیا ہے تا کہ وہ بھی اپنے انتظامی فرائض کی طرف توجہ دیں اور مسافروں کا یہ مسئلہ حل ہو سکے ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close