سوہاوہ

سمارٹ لاک ڈاؤن؛ ایک شہر دو قانون، سوہاوہ میں غریب دوکانداروں کا کاروبار زبردستی بند، بااثر کو کھلی چھٹی

سوہاوہ: ایک شہر دو قانون، نا اہل انتظامیہ کی مٹھی گرم یا مافیا اور سفارش کے سامنے انتظامیہ بے بس، سوہاوہ شہر میں سر عام غریب دکانداروں کا کاروبار زبردستی بند کروا دیا گیا جبکہ جی ٹی روڈ پر بڑے کاروبار کرنے والوں کو کھلی چھٹی دے دی گئی۔

اسسٹنٹ کمشنر سوہاوہ کی طرف سے مسلسل شہر کے مسائل کو نظر انداز کرنے کے بعد ایجنسیز کی رپورٹس کے بعد اعلی احکام نے فوری کارروائی کا حکم دیا تو شہر بھر میں دکانداروں کو فوری دکانیں بند کروائی جانے لگیں جبکہ چند دن قبل وزیر اعظم کے دورہ سوہاوہ پر ہونے والے اخراجات کی جن سے وصولی کی گئی ان کے میں پسند دکانداروں کو کھلی چھٹی دے دی گئی اور سر عام دھڑلے سے کاروبار کیا جا رہا ہے۔

اسسٹنٹ کمشنر سوہاوہ ماریہ جاوید نہ صرف عوام سے رابطہ رکھنے میں بری پرے ناکام کو چکی ہیں بلکہ ان کی طرف سے وزیر اعلی پنجاب کی اوپن ڈور پالیسی سمیت انصاف آپ کی دہلیز اور کرپشن سے پاک پاکستان جیسے نعرے کو بھی ہوا بھی اڑا دیا گیا ہے۔

گزشتہ کئی دنوں سے دکانداروں کے مسلسل اصرار کے باوجود تحصیل انتظامیہ سوہاوہ کو لاک ڈاؤن کے نوٹیفیکیشن کے متعلق مطلع نہ کیا گیا نہ صرف یہ بلکہ تحصیل آفس سوہاوہ میں آنے والے سائلین انتظامیہ کی پالیسی اور رویہ پر سخت برہم دکھائی دیتے ہیں۔

شہریوں نے کمشنر راولپنڈی اور وزیر اعلی پنجاب سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ سوہاوہ میں فرض شناس اور قابل تجربہ کار اسسٹنٹ کمشنر کی تعیناتی کے ساتھ ساتھ تحویل آفس سوہاوہ میں ہونے والی کرپشن کا بھی نوٹس لیں اور سوہاوہ میں کھلی کچہری کا انعقاد کیا جائے تاکہ سوہاوہ کی عوام کے مسائل کا تدارک ہو سکے۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button