پنڈدادنخاناہم خبریں

پنڈدادنخان میں بااثر افراد نے پرائمری سکول کی گزرگاہ میں گندم کی بجائی کر کے راستہ بند کر دیا

پنڈدادنخان کے نواحی گاؤں چوران کے با اثر افراد نے گورنمنٹ پرائمری سکول کی گذر گاہ میں گندم کی بجائی کر کے راستہ بند کر دیا، سینکڑوں معصوم بچے اور بچیوں کو کئی فرلانگ کا چکر کاٹ کر سکول آنا پڑتا ہے۔
تفصیلات کے مطابق پنڈدادنخان کے نواحی گاؤں چو ران کے پرانے گورنمنٹ پرائمری سکول جس کو ازسر نو تعمیر کیا گیا تھا اور اس میں تقریبا ڈیڑھ سو کے قریب بچے اور بچیاں تعلیم حاصل کر رہی ہیں۔ گاؤں کے بااثر افراد محمد رمضان اور یوسف نامی شخص نے اس راستہ پر جو کہ چند فٹ چوڑا تھا گندم کی بجائی کر دی ہے کہ یہ ہماری ذاتی جگہ ہے۔
ذرائع کے مطابق گاؤں کی اکثریت اس حق میں ہے کہ اگر یہ دونوں تین تین فٹ جگہ صرف دے دیں جو کہ چند مرلہ بنتی ہے ہم ان کو پے منٹ کرنے کو تیار ہیں۔ تاکہ چھوٹے چھوٹے معصوم بچے کئی فرلانگ دور کے سفر سے بچ سکیں۔
جہلم اپڈیٹس نے اس حوالہ سے جب سابق چیئر مین ڈاکٹر نصیر کھنڈوعہ سے رابطہ کیا تو انُ کا کہنا تھا کہ میری پوری کوشش ہے کہ معاملہ خوش اسلوبی سے حل ہو جائے تاکہ سکول جانے والے معصول بچوں کی مشکلات کا ازالہ ہو سکے۔
عوامی سماجی حلقوں اور گاؤں کے رہائشیوں نے اعلیٰ حکام اور وفاقی وزیر چوہدری فواد حسین اور سابق چیئر مین یونین کونسل ڈاکٹر نصیر کھنڈوعہ سے مطالبہ کیا ہے کہ جب اس سکول کی تعمیر کی جارہی تھی تو پہلے اس کے راستہ کا انتظام کیوں نہیں کیا گیا اور غفلت اور لاپرواہی اختیار کرنے والے محکمہ تعلیم کے افسران کے خلاف فوری کاروائی کی جائے کہ ان کی غفلت لاپرواہی کی وجہ سے معصوم بچوں کو لمبا راستہ اختیار کر نا پڑ رہا ہے۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button