کوئی دھوکے میں نہ رہے کہ ریاست کمزورہے، اپوزیشن اور ادارے حکومت کے ساتھ ہیں۔ فواد چوہدری

0

وفاقی وزیر اطلاعات فواد چوہدری کا کہنا ہے کہ ہم نقصان نہیں چاہتے لیکن کوئی اس دھوکے میں نہ رہے کہ ریاست کمزور ہے، چاہتے ہیں تشدد کی ضرورت نہ پڑے، مظاہرین کو ایک راستہ دینا چاہتے ہیں۔

پریس کانفرنس کرتے ہوئے فواد چوہدری کا کہنا تھا کہ وزیراعظم نے تمام صورتحال کو سامنے رکھ کر گزشتہ روز تقریر کی۔ ان کا کہنا تھا کہ حکومتی کمیٹی نے چیئرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو زرداری اور مسلم لیگ ن کے صدر شہباز شریف کو صورت حال سے آگاہ کیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ اپوزیشن کو مکمل تعاون کا یقین دلایا ہے اور جو بھی اسٹریٹجی بنے گی اس پر اپوزیشن سے مشاورت کی جائے گی، اپوزیشن نے بھی مکمل تعاون کا یقین دلایا ہے۔ان کا کہنا تھا کہ اپوزیشن نے ان معاملات پر دو فوکل پرسن تعینات کیے ہیں، ہماری کوشش ہو گی کہ پورے پاکستان کی سیاسی قوتوں کو ساتھ لے کر چلیں۔

ان کا کہنا تھا کہ وزراء کو ہدایت کی ہے کہ ملکی موجودہ حالات پر مذہبی رہنماؤں سے بھی رابطہ کیا جائے۔فواد چوہدری نے کہا کہ ایوان میں موجود تمام بڑی جماعتوں کی رائے کو اپنی رائے میں شامل کریں گے، فوکل پرسن تعینات کردئیے ہیں جو اتفاق رائے سے معاملات کو آگے بڑھائیں گے۔

مذہبی جماعتوں کا احتجاج: ملک کے مختلف شہروں میں سڑکیں بلاک، ٹریفک کی روانی متاثر

وفاقی وزیر اطلاعات نے کہا کہ ہم ایک ریاست ہیں، کیسے ہو سکتا ہے کہ کچھ لوگ اٹھ کر فیصلہ دیں کہ یہ بات مانیں گے، یہ بات نہیں مانیں گے۔انہوں نے کہا کہ وزیراعظم نے رات کی تقریر میں حکومت کا نہیں، ریاست کا موقف سامنے رکھا ہے، اپوزيشن اور ریاستی ادارے حکومتی موقف کے پیچھے کھڑے ہیں۔

فواد چوہدری نے کہا کہ لاہور اور راولپنڈی میں کچھ معاملات پر بات چیت چل رہی ہے، فی الحال آپریشن اور تمام صورتحال بتانے کی پوزیشن میں نہیں ہوں، ہم کسی کا نقصان نہیں چاہتے تشدد سے بچنا چاہتے ہیں۔ان کا کہنا تھا کہ ہم نقصان نہیں چاہتے لیکن کوئی اس دھوکے میں نہ رہے کہ ریاست کمزور ہے، آپ کو پتہ نہیں چلے گا کہ آپ کے ساتھ کیا ہورہا ہے لیکن ہم ایک راستہ دینا چاہتے ہیں۔


فواد چوہدری نے مزید کہا کہ جو لوگ ریاست کی رٹ کو اس طرح چیلنج کریں گے جو بغاوت کے زمرے میں آتا ہے، انہیں اس کا حساب دینا ہو گا۔ان کا کہنا تھا کہ قانونی راستے سب کے لیے کھلے ہیں لیکن ہم پاکستان کو بنانا ری پبلک نہیں بننے دیں گے، اگر وہ تھوڑے سے بھی عقلمند ہیں تو اشارہ سمجھ جائیں۔

فوادچوہدری کا کہنا تھا کہ کسی مسلمان کا ایمان عشق رسول ﷺ کے بغیر مکمل نہیں،ہم نبی ﷺکی شفاعت حاصل کرنے کے لیے دعا کرتے ہیں،وزیراعظم عمران خان عقیدت کے اس درجے پر ہیں کہ مدینہ کی سر زمین پر جوتے کے ساتھ نہیں اترتے،ائیر پورٹ پر جوتے اتار کر مدینہ جاتے ہیں۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.