جہلم

ضلع جہلم میں موسم مزید سرد؛ گرم کپڑوں، سوپ، خشک میوہ جات سمیت ہیٹرز کا استعمال بڑھ گیا

جہلم: سرد موسم؛ گرم کپڑوں، سوپ، خشک میوہ جات سمیت ہیٹر زکا استعمال بڑھ گیا، گیس پریشر کم ہو نے سے صارفین کو مشکلات کا سامنا، صارفین کا ارباب اختیار سے نوٹس لینے کا مطالبہ۔
تفصیلات کے مطابق جہلم شہر و گردونواح میں ٹھنڈی ہواؤں کا راج ہے اور یخ بستہ خشک ہوائیں چل رہی ہیں جسکی وجہ سے گرم کپڑوں ، سوپ،خشک میوہ جات کا استعمال بڑھ گیا جبکہ سردی کی شدت میں اضافے کے ساتھ ہی ہیٹر زکا استعمال بھی بڑھ گیا ہے۔
گیس پریشراور بعض علاقوں میں سوئی گیس کی عدم دستیابی سے شہری متبادل ایندھن کے طور پر ایل پی جی گیس ، لکڑی اور کوئلے کا استعمال کر رہے ہیں ، ایل پی جی گیس ،لکڑی اور کوئلہ کی طلب بڑھتے ہی دکانداروں نے گزشتہ سال کے مقابلے میں قیمتوں میں 25سے 30فیصد خود ساختہ اضافہ کر دیا ہے جس کی وجہ سے شہری حلقوں میں تشویش کی لہر دوڑ گئی ہے۔
دوسری جانب سردی کی شدت میں اضافے نے مچھلی اور مرغ کے گوشت کی قیمتوں میں اضافہ کردیا ہے سردی کے موسم میں سوپ’ مچھلی’ چکن پکوڑا کی فروخت عام دنوں کی نسبت زیادہ ہو جاتی ہے جس کی وجہ سے مرغی کا گوشت جوکہ گزشتہ روز قبل 180 روپے کلو کے حساب سے فروخت ہو رہا تھا اچانک 220 روپے کلو میں فروخت ہورہا ہے اسی طرح مچھلی کی کم سے کم قیمت 180 روپے سے بڑھ کر 275 روپے کلو تک جا پہنچی ہے ، جبکہ اعلی نسل کی مچھلی من مانے نرخوں پر فروخت کی جا رہی ہے۔
اسی طرح بازار میں فروخت ہونیوالا سوپ کا پیالا جو قبل ازیں 50 روپے میں فروخت ہورہا تھااس کی قیمت میں بھی اضافہ کرکے60 روپے میں فروخت کیا جا رہا ہے۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button