جہلم

جہلم میں آوارہ اورخارش زدہ خونخوار کتوں کی بھرمار، متعدد شہری کتوں کے کاٹنے سے علاج کروانے پر مجبور

جہلم: شہر اور گردونواح کے علاقوں میں آوارہ، خارش زدہ خونخوار کتوں کی بھرمار ، متعدد شہری کتوں کے کاٹنے سے علاج کروانے پر مجبور، میونسپل کارپوریشن کی سینٹیشن برانچ آوارہ کتوں کو تلف کرنے میں بری طرح ناکام ، شہریوں کا ایڈمنسٹریٹر میونسپل کارپوریشن سے نوٹس لینے کا مطالبہ۔

تفصیلات کے مطابق جہلم شہر و گردونواح میں آوارہ کتوں کی بہتات نے شہریوں کا جینا دوبھر کر دیا۔ میونسپل کارپوریشن نے لاتعلقی اختیار کر لی۔جہلم شہر کے بیشتر گلی ،محلوں میں آوارہ کتوں کی ٹولیاں شہریوں کو تلاش کرتی دکھائی دیتی ہیں۔

ہسپتال ذرائع کے مطابق کتوں کے کاٹے جانے کے مریضوں کی تعداد میں پہلے سے اضافہ ہو رہا ہے۔ محلہ چشتیاں ،کریم پورہ ، محمودہ آباد، عباس پورہ، جادہ، اسلام پورہ، کالاگجراں ، محمدی چوک، بلال ٹاؤن ، شاندار چوک، قبرستان چوک، روہتاس روڈ، کالا گجراں روڈ، اورگردونواح میں آوارہ خارش زدہ کتوں کی ٹولیاں شہریوں و خواتین اور بچوں کو تلاش کرتی دکھائی دیتی ہیں۔

میونسپل کارپوریشن کا عملہ آوارہ کتو ں کو تلف کرنے کی بجائے پچھلے کئی سالوں سے خاموش تماشائی بنا ہوا ہے۔آوارہ کتے جہاں راہگیروں کے لیے مصیبت بنے ہوئے ہیں وہاں بیماریاں پھیلانے میں بھی پیش پیش ہیں۔ آوارہ کتوں کو تلف کرنا بنیادی طورپر میونسپل کارپوریشن کی ذمہ داری ہے۔میونسپل کارپوریشن حکام اس بارے مکمل خاموش اور آنکھیں بند کیے ہوئے ہیں۔

شہریوں نے ایڈمنسٹریٹر میونسپل کارپوریشن اور دیگر حکام سے پرزور مطالبہ کیا ہے کہ آوارہ اور خارش زدہ کتوں کو فوری طور پر تلف کرنے کے لیے منظم مہم چلائی جائے تاکہ شہریوں کو آوارہ کتوں کے حملوں سے محفوظ بنایا جا سکے۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button