جہلم

عیدالفطر کی چھٹیاں گزارنے کے بعد پردیسیوں کی واپسی کا عمل شروع، پبلک ٹرانسپورٹ کا پہیہ چل پڑا

جہلم: عید الفطر کی چھٹیاں گزارنے کے بعد پردیسیوں کی واپسی کا عمل شروع، پبلک ٹرانسپورٹ کا پہیہ چل پڑا، حکومت کی جانب سے گاڑیوں میں 50 فیصد مسافروں کو بٹھانے کے اعلانات پر عملدرآمد نہ ہوسکا، آرٹی اے سیکرٹری سمیت قانون نافذ کرنے والے ادارے غائب ، مسافر سراپا احتجاج، وزیراعلیٰ پنجاب سے نوٹس لینے کا مطالبہ۔

تفصیلات کے مطابق عیدالفطر کی چھٹیاں گزارنے کے بعد اتوار سے اندرون و بیرون شہر سے پبلک ٹرانسپورٹ بحال ہو چکی ہے ، عید اپنوں کے ساتھ منانے کے بعد پردیسیوں کی اپنے آبائی علاقوں سے واپسی کا سلسلہ شروع ہوچکا ہے۔

نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر نے عید کی چھٹیوں کے دوران لاک ڈاؤن میں ایس او پیز پرعمل درآمد کی صورتحال کو اطمینان بخش قرار دیا تھا جس کے بعد اتوار سے ٹرانسپورٹ سروس بحال کر دی گئی ہے آج سے شہر سمیت ضلع بھر کی مارکیٹیں، تجارتی مراکز رات 8 بجے تک کھلے رہیں گے ۔

سرکاری اور نجی دفاتر کے اوقات کار معمول کے مطابق ہوں گے، دفاتر میں ملازمین کی 50 فیصد حاضری کی اجازت ہوگی، 50 فیصد عملہ گھر اور 50 فیصد دفاتر میں کام کرے گا۔ اتوار سے تاحکم ثانی پبلک ٹرانسپورٹ 50 فیصد مسافروں کیساتھ شروع کر دی گئی ہے لیکن بدقسمتی سے ٹرانسپورٹرز کورونا ایس او پیز پر عملدرآمد کرنے کی بجائے مسافر گاڑیوں میں مسافروں کو بھیڑ بکریوں کی طرح ٹھونس کر لا رہے ہیں جس کی وجہ سے کورونا وائرس پھیلنے کے خطرات بڑھ چکے ہیں۔

قابل ذکر بات یہ ہے کہ آر ٹی اے سیکرٹری سمیت قانون نافذ کرنے والے اداروں کے ذمہ داران ابھی تک چھٹیاں گزارنے کے بعد ڈیوٹیوں پر واپس نہیں پہنچے جس کیوجہ سے ٹرانسپورٹرز نے ضلع بھر میں چلنے والے ٹرانسپورٹ کے لئے جنگل کا قانون نافذ کر رکھا ہے۔

مسافروں نے وزیراعلیٰ پنجاب، صوبائی وزیر ٹرانسپورٹ ، پنجاب روڈ ٹرانسپورٹ اتھارٹی سے نوٹس لینے اور کورونا ایس او پیز پر عملدرآمد نہ کرنے والے ٹرانسپورٹرز کے خلاف کارروائی کرنے کا مطالبہ کیاہے ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button