شریف اور زرداری خاندانوں کا حال کی طرح مستقبل بھی تاریک ہے، فواد چوہدری

0

جہلم (اے پی پی) وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات چوہدری فواد حسین نے کہا ہے کہ نواز شریف اور آصف علی زرداری نے کرپشن کی فصل کو اتنا پانی دیا ہے کہ وہ اب کرپشن سنگلاخ درخت کا روپ دھار چکی ہے، نواز شریف 300 ارب روپے کرپشن کے ساتھ جیل میں ہیں جبکہ آصف علی زرداری بھی جلد اتنی ہی 300 ارب روپے کی کرپشن کے کیس میں جیل میں ہوں گے۔ پاکستان سرسبز مستقبل کی جانب گامزن ہے۔ جنگلات انسانی وملکی ترقی اور ماحول پر مثبت اثرات مرتب کرتے ہیں۔

وفاقی وزیر اطلاعات جمعرات کو جہلم میں جنگلات کے عالمی دن کے موقع پر‘‘پلانٹ فار پنجاب’’کے تحت شجر کاری مہم کی افتتاحی تقریب سے خطاب کررہے تھے۔ تقریب میں کمشنر راولپنڈی جودت ایاز، ڈی سی جہلم سیف انور جپہ، سٹیشن کمانڈر جہلم، بریگیڈیئر وقاراحمد، چیف کنزرویٹر آفیسر جنگلات اطہر شاہ گھگا، ڈی پی او جہلم سید حماد عابد، اے ڈی سی جی جنرل جہلم سمیت دیگر حکام اس موقع پر موجود تھے۔

وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات چوہدری فواد حسین نے اس موقع پر پودا لگا کر شجر کاری مہم کا باقاعدہ آغاز کیا۔ کمشنر راولپنڈی جودت ایاز، ڈپٹی کمشنر جہلم محمد سیف انور جپہ، ڈی پی او جہلم کیپٹن (ر)سید حماد عابد، سٹیشن کمانڈر بریگیڈیئر وقار، چیف کنزرویٹر فارسٹ ڈویژن راولپنڈی اطہر شاہ کھگھا اور دیگر افسران نے پودے لگائے۔

انہوں نے کہا کہ بلاول بھٹو اور مریم نواز کی اپنی کمائی تو نہیں ہے وہ اپنے والدین کی کرپشن کے پیسوں پر سیاست کررہے ہیں‘ان دونوں کی سیاست‘‘ابوبچاؤ’’تک محدود ہے‘ وزیراعظم عمران خان اور پی ٹی آئی نے کرپشن کی دیواروں کو جو دھکا دیا ہے اب اس پر کبھی عمارت تعمیر نہیں ہوسکے گی۔

وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات نے کہا کہ بھارتی عدالت سے سمجھوتہ ایکسپریس کیس میں ملوث دہشت گردوں کو رہا کرنا انصاف کے منہ پر طمانچہ ہے‘سعودی عرب اور یو ای اے کے سربراہان کے بعد اب ملائیشا کے وزیراعظم پاکستان کے دورہ پر آرہے ہیں‘گزشتہ دود کی سکیورٹی ریاست کے ویزہ رجیم کو یکسر تبدیل کر کے دنیا کے لئے پاکستان کو کھول دیا گیا ہے‘ بھارت کا عدالتی سسٹم دہشت گردوں کے لئے ڈرائی کلینرسسٹم بن چکا ہے۔

وفاقی وزیر چوہدری فواد حسین نے کہا کہ آج جنگلات کا عالمی دن ہے اس حوالے سے جہلم میں سب سے بڑا رقبہ جہلم میں ہے جہاں پر درخت لگانے کی مہم کا آغاز ہوگیا ہے‘193ایکٹر جگہ پر قبضہ ہوا تھا ضلعی انتظامیہ کو مبارکباد دیتا ہوں جنہوں نے قبضہ خالی کرایا اب یہاں پر درخت لگائے جائیں گے۔

انہوں نے کہا کہ ماضی میں پہلے کبھی ماحول دوست حکومت ہی نہیں رہی‘عمران خان کی قیادت میں پہلی ماحول دوست حکومت ہے جس کی وجہ آج پورے پاکستان میں ماحول کی دوستی ہے‘پچھلی حکومتوں نے درختوں کو کرپشن کی نذر کر دیا‘چھانگا مانگا‘میانوالی کے جنگلات پر قبضے کیے گئے۔

وفاقی وزیر نے کہا کہ نواز شریف اور آصف علی زرداری نے کوئی شعبہ نہیں چھوڑا جہاں کرپشن نہ کی ہے‘اب مستقبل کے دو نام نہاد لیڈرمریم نواز اور بلاول بھٹو سامنے آئے ہیں ان دونوں کے پاس سیاست کا تو تجربہ نہیں لیکن دونوں کے ابو کی کرپشن کے پیسے ضرور ہیں‘ان دونوں کی سیاست اور تحریک مستقبل میں بھی اتنی ہی تاریک ہوگی جتنی حال میں تاریک ہے‘ دونوں کی سیاست ابو بچاؤ تحریک ہے۔

انہوں نے کہا کہ تاریخ گواہ ہے کہ مریم اور بلاول نے زندگی میں ایک پیسہ خود نہیں کمایا اور نہ ہی کوئی جدوجہد کی ہے۔ پہلے بھی کہا تھا کہ زرداری اور نواز کا آخری الیکشن ہے اب تو ان کی اولادیں بھی مان چکی ہے۔

وفاقی وزیر چوہدری فواد حسین نے کہا کہ بھارت کی عدالت نے سمجھوتہ ایکسپریس کیس کے تمام مجرمان کو بری کر دیا ہے یہ انصاف کے منہ پرطمانچہ ہے‘بھارتی عدالتوں نے پہلے بھی ایسے ہی فیصلے دیئے جو دہشتگردوں اور انتہا پسندوں کو تحفظ دینے کے مترادف ہے۔

انہوں نے کہا کہ شجر کاری مستقبل کی نوید ہے‘جہلم تاریخی اہمیت کا حامل ہے جہاں پر قلعہ جوگی‘روہتاس قلعہ‘الیگزلنڈر‘سکندر اعظم جنگ کا مقام اورسیاحتی مقامات ہیں یہاں پر سرمایہ کاری کے لئے کوشاں ہیں۔انہوں نے کہا کہ محمد بن سلیمان اور محمد بن زاہد کے بعد اب ملائیشیا کے وزیراعظم مہاتیر محمد پاکستان آرہے ہیں ایک طویل عرصے کے بعد پاکستان عالمی لیڈرز کے لئے کھلاہے‘ہم نے اپنی پالیسز کویکسر تبدیل کر دیا ہے۔

وفاقی وزیر اطلاعات نے کہا کہ پاکستان میں تمام اداروں ایک پیچ پر ہیں اور اپنے مفاد میں شدت پسندوں کے خلاف بھرپور کریک ڈاؤں کیا جارہا ہے‘کسی کو اجازت نہیں دی جائے گی وہ پاکستان کی سرزمین کوکسی کے خلاف استعمال کریں۔ ہم ملک کو آگے لیکر جانا چاہتے ہیں‘ پاکستان کا مستقبل روشن ہے اور محفوظ ہاتھوں میں ہے۔

فواد چوہدری نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان ماحول اورشہروں کی خوبصورت بنا نے کی بات کرتے ہیں تو یہ نئی باتیں لگتی ہیں کیونکہ پہلے کسی نے ایسی باتیں نہیں کی۔انہوں نے کہا کہ دو خاندانوں کی سیاست کرپشن کی وجہ سے پورا پاکستان نیچے آیا دو خاندان اوپر جارہے تھے لیکن اب ان کے احتساب کا وقت آرہا ہے ان لوگوں کے پیٹ میں اس لئے درد ہے کہ وہ باہر نہیں جا رہے۔

وفاقی وزیر چوہدری فواد حسین نے کہا کہ آئندہ چند ماہ میں مریم اور بلاول کو بھی پتہ لگ جائے گا کہ ان کی سیاست بھی ختم ہوچکی ہے۔

کمشنر راولپنڈی جودت ایاز نے کہا کہ میں نے اپنے کیرئیر کا آغاز 21سال پہلے جہلم سے ہی کیا تھا‘مجھے یہ جان کے خوشی ہوئی کہ ریاست کی اراضی ہم نے واگذار کرالی گئی ہے۔انہوں نے کہا کہ جس طرح عوام شجرکاری مہم میں عوام‘بچے اور رضا کار حصہ لے رہے ہیں اس پر بہت خوشی ہے۔

انہوں نے کہا کہ کسی بھی معیشت کے لئے جنگلات کا رقبہ پانچواں حصہ ہونا چاہیے‘اس وقت 17فیصد کم ہے اس پور کرنے کے لئے حکومت کے ساتھ ساتھ تمام طبقات حصہ لیں گے تو یہ ہدف جلد پورا ہوجائے گا۔

ڈی سی جہلم سیف انور جپہ نے کہا کہ آج 35ایکٹر پر 26ہزار پودے لگانے جارہے ہیں‘یہاں پرواٹر ٹربائن لگائی گئی ہے تا کہ پودوں کی بہتر نشوونما ہوسکے۔انہوں نے کہا کہ آنے والی مون سون میں بھی شجر کاری کی اسی طرز کی مہم چلائی جائے گی۔

چیف کنزرویٹر آفیسر عطر شاہ گھگا نے کہا کہ ضلعی انتظامیہ کی مدد سے جہلم میں 193ایکٹر اراضی کا قبضہ حاصل کر لیا گیا ہے‘اسی طرح محکمہ جنگلات نے اٹک اور اسلام آباد میں سینکڑوں ایکٹر اراضی پر تجاوزات واگزار کر کے وہاں پر شجر کاری کا آغاز کر دیا ہے۔

قبل ازیں وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات چوہدری فواد حسین نے محکمہ جنگلات‘زراعت‘ریسکیو 1122‘ سٹی ٹریفک پولیس‘ضلعی پولیس‘سول ڈیفنس‘سوشل ویلفیئر‘پاپولیشن ڈیپارٹمنٹ‘لائیو سٹاک سمیت دیگر اداروں کی جانب سے لگائے گئے سٹالز کا بھی دورہ کیا جہاں پر انھیں اپنے اپنے اداروں کے امور سے متعلق بریفنگ دی گئی۔

شجرکاری مہم میں ڈویژنل فارسٹ آفیسر ملک ساجد قدوس، ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر ریونیو میسم عباس، ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر جنرل سید نزارت علی، ڈائریکٹر پنجاب یونیورسٹی مدثر غفور،ایس ڈی او فارسٹ سدھیر مغل، ا سسٹنٹ کمشنر ز،سی ای او ہیلتھ ڈاکٹر وسیم اقبال، سی ای او ایجوکیشن سید مظہر حسین، ڈی او انفارمیشن عثمان سندھو اور محکمہ جنگلات،صحت،تعلیم، سوشل ویلفیئر، ریسکیو 1122 ، پاپولیشن، سول ڈیفنس، ایگریکلچر، لائیو اسٹاک اور دیگر محکموں کے ضلعی افسران و ممبران سول سوسائٹی، نمائندگان نجی ادارے ، سکول و کالجز اور یونیورسٹی کے طلبا و طالبات، وکلا کمیونٹی، نجی فلاحی ادارے ، ڈاکٹرز کمیونٹی، تاجر کمیونٹی اور صحافی برادری نے مل کر 35ایکڑ اراضی پر 26000 پودے لگائے۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.