جہلم

8 اکتوبر نیشنل ڈیزاسٹر ڈے، ریسکیو 1122 جہلم کی جانب سے شاندار تقاریب کا انعقاد

جہلم: 8اکتوبر نیشنل ڈیزاسٹر ڈے، ریسکیو 1122 جہلم کی جانب سے شاندار تقاریب کا انعقاد،ریسکیو 1122 جہلم کے زیر اہتمام قدرتی آفات سے نمٹنے کے لئے آگاہی کا دن منایا گیا۔دن کا آغاز تلاوت کلام پاک سے کیا گیا۔

ریسکیو اسٹیشن جہلم سے چوہدری الطاف حسین ہائی سکول تک فلیگ مارچ کیا گیاجس میں ریسکیو افسران ،ریسکیو سٹاف اور ریسکیو محافظ نے شرکت کی۔بعد ازاں مذکورہ سکول سے ڈسٹرکٹ کچہری تک آگاہی واک کا اہتمام کیا گیا جسکی قیادت ڈپٹی کمشنرمحمد جہانزیب اعوان اور ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر(جنرل )بلال فیروزجوئیہ نے کی۔

ڈاکٹر فیصل محمود ڈسٹرکٹ ایمرجنسی آفیسر ریسکیو 1122 جہلم نے شرکاء کو سانحات اور حادثات سے متعلق بریفنگ دی۔ اس تقریب کے اختتام پر 08اکتوبر 2005 میں شہید ہونے والے افراد کے لئے دعا کی گئی۔اس کے علاوہ ضلع کونسل ہال میں جہلم میں ہونے والے حادثات سے متعلق تصاویر کی نمائش کی گئی جس کو شرکاء نے خوب سراہا۔

ڈپٹی کمشنر جہلم جناب محمد جہانزیب اعوان نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ قدرتی آفات اور سانحات قدرت کی طرف سے ہوتے ہیں لیکن ان سے نمٹنے کے لئے آگاہی اور بہتر حکمت عملی ہمارا فرض ہے اور بلا شبہ ریسکیو 1122 اس میں بہترین کردار ادا کر رہا ہے ۔

علاوہ ازیں! ڈیزاسٹر سے متعلق آگاہی ہفتہ بھی منایا گیا۔گورنمنٹ کامرس کالج جہلم، گورنمنٹ گرلز ڈگری کالج جہلم، گورنمنٹ ہائی سکول دھریالہ جالپ، گورنمنٹ ہائی سکول ہرن پور اور گورنمنٹ راجہ غضنفر ہائی سکول پنڈ دادنخان میں قدرتی آفات سے بچاؤ کے متعلق آگاہی پروگرامز اور سیمینارز کا انعقادکیا گیاجس میں سکول و کالج انتظامیہ اور مختلف مکتبہ فکر کے افراد نے شرکت کی۔

ریسکیو 1122کے تربیت یافتہ عملے نے ایمرجنسی صورت حال میں بروقت ریسپانس ، دھماکے یا کسی بڑے حادثے میں زخمی ہونے والے افراد کی بروقت طبی امداد، دھویں میں پھنسے افراد کو نکالنااور آگ پر قابو پانے کا عملی مظاہرہ کیا۔ کالج و سکول کی انتظامیہ اور طلباء نے ریسکیو 1122 کے اس اقدام کو خوب سراہا ۔

اس موقع پر ڈسٹرکٹ ایمرجنسی آفیسرڈاکٹر فیصل محمود نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ریسکیو 1122 جہلم شہریوں کو بہتر سہولیات فراہم کرنے کے لئے اپنے تمام تر وسائل بروئے کار لا رہی ہے۔قدرتی آفات سے نمٹنے کیلئے آگاہی کا دن منانے کا بنیادی مقصد بھی یہی ہے کہ تمام متعلقہ اداروں کا آپس میں باہمی رابطہ مضبوط کیا جائے تا کہ کس بھی نا گہانی آفت سے بہتر انداز سے نمٹا جا سکے۔ قدرتی آفات سے نمٹنے سے متعلق آگاہی وقت کی عین ضرورت ہے۔اوراسی کی بدولت ہم ایک محفوظ پاکستان اور محفوظ معاشرے کی تعمیر میں اپنا کردار ادا کر سکتے ہیں۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button