جہلم

ضلع جہلم میں تاجروں نے لاک ڈاؤن کے سماجی فاصلے کے احکامات ہوا میں اڑا دیئے

جہلم: تاجروں نے لاک ڈاؤن کے احکامات ہوا میں اڑا دیئے ، حکومت کی طرف سے2 روز کارروبار بند رکھنے کے احکامات بھی نظر انداز ،تاجروں نے ہفتے کے ساتوں روز کارروبار جاری رکھا، حکومتی ایس او پیز ہوا میں اڑا دئیے گئے۔

تفصیلات کے مطابق جہلم شہر و گردونواح کے دکانداروں نے فیس ماسک ، ہینڈ سینی ٹائزراور سماجی فاصلوں کو نظر انداز کرتے ہوئے دکانوں کے اندر درجنوں خریداروں کو داخل کر لیا جاتا ہے۔

قابل ذکر بات یہ ہے کہ صارفین تو دور کی بات دکاندار بھی ہینڈ سینی ٹائزر اور فیس ماسک استعمال کرنا اپنی توہین سمجھتے ہیں چھوٹی چھوٹی دکانوں کے اندر خریداروں کا رش دکھائی دیتا ہے جبکہ انتظامیہ ایس او پیز پر عملدرآمد کروانے کی بجائے دفتروں تک محدود ہو کر رہ گئی ہے ۔ ضلع بھر میں میلے ٹھیلے جاری ہیں۔

جنرل بس اسٹینڈ ، ریلوے اسٹیشن ، سول ہسپتال اندرون شہر کے بازاروں ، نجی ہسپتالوں ،سرکاری اداروں میں شہریوں کا جم غفیر انتظامیہ کو منہ چڑھا رہا ہے۔

شہریوں کا اس حوالے سے کہنا ہے کہ انتظامیہ کورونا ایس او پیز پر عملدرآمد کروانے میں سنجیدہ دکھائی نہیں دیتی انتظامیہ صرف فوٹو سیشن اور سب اچھا ہے کہ نعرہ بلند کرنے میں مگن ہے جبکہ کورونا وائرس میں مبتلا مریضوں کی تعداد میں روز بروز اضافہ انتظامیہ کی کارکردگی پر سوالیہ نشان ہے۔

ضلع جہلم کے شہریوں نے وزیراعظم پاکستان وزیر اعلیٰ پنجاب، چیف سیکرٹری پنجاب کمشنر راولپنڈی سے مطالبہ کیاہے کہ کورونا ایس او پیز کی خاف ورزی کرنے والے افراد کے خلاف قانونی کارروائیاں عمل میں لائی جائیں تاکہ کورونا کی تیسری بے قابو لہر پر قابو پا یاجا سکے ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button