پڑی درویزہاہم خبریں

اگر ٹیکس وصولی کا ہدف بڑھانا ہے تو ہر ڈاکخانہ میں ٹیکس وصولی ڈیسک قائم کر نا ہو گا۔ ملک محمد شفیق

پڑی درویزہ: اگر ٹیکس وصولی کا ہدف بڑھانا ہے تو ہر ڈاکخانہ میں ٹیکس وصولی ڈیسک قائم کر نا ہو گا ،ٹیکس نا دہندہ کو ٹیکس چور کے نام سے پکارا جائے ۔ پاکستان مسلم لیگ ن کے دیرنیہ کارکن کی وزیر اعظم پاکستان عمران خان کے نام انوکھی تجاویز۔

تفصیلات کے مطابق پڑی درویزہ کے رہائشی پاکستان مسلم لیگ ن کے دیرینہ کارکن ملک محمد شفیق نے ایک بیان میں وزیر اعظم پاکستان عمران خان کے نام انوکھی تجاویز دی ہیں انہوں نے کہا ہے کہ ملک کی اندرونی آمدنی میں ٹیکس وصولی ریڑھ کی ہڈی کی حیثیت رکھتے ہیں ۔ اگر موجودہ وزیر اعظم پاکستان عمران خان ٹیکس کی وصولی سے ملکی سالانہ آمدنی میں اضافہ کرنا چاہتے ہیں تو وہ انہیں قدر کی نگاہ سے دیکھتے ہیں ۔

انہوں نے ٹیکس وصولی کے حوالے سے انوکھی تجاویز دیتے ہوئے کہا کہ سالانہ آمدنی کے ہدف پر از حد نظر ثانی کی ضرورت ہے جیسا کہ آج صرف 8لاکھ ٹیکس دہندگان کا انکشاف کیا گیا ہے 20کروڑ کی آبادی میں کوئی معنی رکھتی اس لیے بہتر یہ ہو گا کہ اس تعداد میں اضافہ کرنے کے لیے ٹیکس وصولی کے طریقہ کار پر نظر ثانی کرنا ہو گی اور ہر ڈاکخانہ میں ایک ٹیکس وصولی کا ڈیسک قائم کر کے ذاتی طور پر گاڑی اور بڑے مکانات کے مالکان کو بھی ٹیکس نیٹ میں لانا ہو گا تاکہ ٹیکس دہندگان کو FBRاسلام آباد یا پھر ضلعی ٹیکس دفاتر کے چکر نہ لگانے پڑیں نیز ہر ٹیکس نادہندہ کو ٹیکس چور کے نام سے پکارا جائے ۔

ملک محمد شفیق کا کہنا تھا ہم ہر حوالے سے عمران خان کا ساتھ دینا چاہتے ہیں وہ صرف ٹیکس کی وصولی اور مصرف میں مخلص ہو جائیں ۔ ان کا مزید کہنا تھا جن سکینڈین یوین ممالک کا ذکر وزیر اعظم کی طرف سے کیا گیا ہے تو وہاں کی طرح ہر پاکستانی کو سرکاری حیثیت سے نوازنا ہو گا یکساں معیاری تعلیم ، صحت اور رہائش جیسی بنیادی سہولیات کی حکومتی ضمانت دے کر واقعی سماجی فلاحی ریاست بنیاد فراہم کر دینا ہو گی ۔

ملک محمد شفیق کا کہنا تھا کہ یہی انقلاب بذریعہ انتخاب ثابت ہو گاکیونکہ ایسی بنیادی سہولیات کی فراہمی سے کرپشن کے دروازے بند کرنے میں ممکنہ حد تک مدد مل سکتی ہے ، حتیٰ کے الیکشن کے لیے بھی اخراجات حکومتی خزانے سے دینے ہوں گے جیسا کہ مذکورہ ممالک میں رواج عام ہے ۔ایسے اقدامات سے موروثی سیاست کا خاتما ممکن ہو سکتا ہے ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button