جہلماہم خبریں

قتل یا حادثہ؛ دریائے جہلم میں نوجوان ڈوب کر جاں بحق، لاش تاحال نہ مل سکی

جہلم: کرسچن کالونی کے رہائشی نبیل ولد پرویز رحمت نے تھانہ صدر میں درخواست دیتے ہوئے موقف اختیار کیا کہ میرا بھائی روحیل ولد پرویز مسیح ، اپنے دوستوں کے ہمراہ جن میں پرنس پطرس ولد پطرس شمعون ،مشتاق ولد یونس مسیح سکنہ کرسچن کالونی مورخہ 29 جون صبح 10 بجے دریا جہلم پر نہانے کے لئے گئے شام کو جب میرا بھائی روحیل ولد پرویز مسیح گھر نہ آیا تو ہم نے اس کے دوست پرنس مسیح سے رابطہ کیا تواس نے کہا کہ آپ کا بھائی دریا کے کنارے سویا ہوا ہے پھر اس کو ساتھ لیکر ہم لوگ دریا کنارے پہنچے تو وہاں میرا بھائی موجود نہ تھا ، تو ہم نے پرنس سے دوبارہ پوچھا کہ ہمارابھائی کہا ں ہے سچ سچ بتاؤ تو وہ ٹال مٹول کرنے لگا بار بار اصرار پر اس نے بتایا کہ ہم تینوں جب دریا میں نہا رہے تھے تو آپ کا بھائی دریا میں ڈوب گیا تھا ، جس پر ہمیں قوی شبہ ہے کہ ہمارے بھائی کو اس کے دوستوںنے دریا میں ڈبو کر مارڈالا ہے ۔ ایک ہفتے سے زائد کا وقت گزرجانے کے باوجود پولیس نے کسی قسم کا تعاون نہیں کیا، اور نہ ہی ہمارے بھائی کی نعش ملی ہے۔ متاثرہ افراد نے آئی جی پنجاب، آرپی او راولپنڈی ، ڈی پی او جہلم سے مطالبہ کیا ہے کہ ہمارے بھائی کو تلاش کروانے میں ہماری مدد کی جائے تاکہ ہمیں اصل حقائق بارے پتہ چل سکے ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button