سول ہسپتال کھیوڑہ علاقہ مکینوں کیلئے وبال جان بن گیا، ڈاکٹرز کمی، سہولیات کا فقدان، مریض ذلیل و خوار

0

کھیوڑہ: سول ہسپتال کھیوڑہ علاقہ مکینوں کے لئے وبال جان بن گیا، ڈاکٹرز کی کمی، ادویات کا نہ ہونا اور دیگر بنیادی سہولیات کے فقدان کی وجہ سے مریض ذلیل و خوار ہو گئے۔ علاقہ مکینوں کا اعلیٰ حکام سے فوری نوٹس لینے کا مطالبہ۔

تفصیلات کے مطابق ضلع جہلم کا دوسرا بڑا شہر کھیوڑہ جس کے سول ہسپتال میں بنیادی سہولیات کے فقدان کی وجہ سے مریض ذلیل و خوار ہو رہے ہیں۔کوالیفائیڈ ڈاکٹرز اور ادویات نہ ہونے کی وجہ سے شہری شدید ذہنی اذیت کا شکار ہیں۔

صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے مریضوں نے بتایا کہ سول ہسپتال میں 18 ویں گریڈ کی سیٹ اورڈینٹل سرجن کی سیٹ بھی خالی ہے۔رات کے اوقات میں کوئی ڈاکٹر ڈیوٹی پر موجود نہیں ہوتا۔اگر کوئی لڑائی جھگڑا ہو جائے تو ایم ایل سی رپورٹ سول ہسپتال کھیوڑہ میں مستقل ڈاکٹر نہ ہونے کی وجہ سے تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتال پنڈدادنخان سے بنوائی جاتی ہے۔ ہسپتال میں فریش اور ان ٹرینڈ ڈاکٹرز کو لگا دیا گیا ہے جو کہ ان ٹرینڈ ہونے کی وجہ سے مریضوں کو ٹھیک طرح چیک نہیں کرتے، مریض سول ہسپتال کھیوڑہ میں چیک اپ کروانے سے ڈرنے لگے۔

مہنگائی کے اس دور میں جہاں غریب آدمی مشکل سے اپنا گھر چلا رہا ہے وہ کیسے پرائیویٹ ہسپتالوں میں اپنا علاج کروا سکتا ہے مفت علاج بھی غریب آدمی کے لئے خواب بن کر رہ گیا ہے۔سول ہسپتال کھیوڑہ میں کوالیفائیڈ ڈاکٹرز نہ ہونے کی وجہ سے مریض پرائیویٹ ہسپتالوں میں دھکے کھا رہے ہیں۔جب بھی کوئی مریض چیک کروانے جاتا ہے تو اس کو ادویات میڈیکل سٹور سے لینے کا مشورہ دیا جاتا ہے۔

علاقہ مکینوں نے اعلی حکام سے پرزور اپیل کی ہے کہ جلد سے جلد سول ہسپتال کھیوڑہ میں کوالیفائی ڈاکٹر کو مسقتل تعینات کیا جائے تاکہ غریب آدمی کو مفت علاج میسر آ سکے۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.