دینہ میں سوتیلے بیٹے نے فائرنگ کر کے والدہ اور اپنے 4 معصوم بہن بھائیوں کو قتل کر دیا

0

دینہ (عامر کیانی+ رضوان سیٹھی+ عرفان محبوب) نواحی علاقہ میں قتل کی لرزہ خیز واردات،سوتیلے بیٹے کی گاڑی پر فائرنگ، خاتون اور بچوں سمیت 5 افراد جاں بحق ،واردات کے بعدعلاقے میں خوف و ہراس ، ملزم گرفتار ، لاشیں پوسٹمارٹم کے لیے ڈسٹرکٹ ہیڈ کواٹر ہسپتال منتقل کر دی گئیں۔

تفصیلات کے مطابق منگل کے روز دینہ کے نواحی علاقہ تھانہ منگلا کی حدود آڑہ بڈھیار میں قتل کی لرزہ خیز واردات پیش آئی جس میں کیڑی پکھوال کے رہائشی خادم حسین فیملی کے ہمراہ میرپور سے اپنے گھر آرہی تھے کہ پیچھے سے آتی ہوئی مہران کار میں نقاب پوش سوتیلے بیٹے نادر ولد خادم سکنہ جاتلاں نے گاڑی کو روک کر اندھا دھند فائرنگ شروع کر دی۔

فائرنگ سے چار بچے اور ایک عورت موقع پر جاں بحق ہو گئی جب کہ بچوں کا والد اور ڈرائیور محفوظ رہے، جاں بحق ہونیوالوں میں خادم حسین سکنہ کیڑی پکھوال کی زوجہ فرزانہ بی بی عمر 45سال ،ان کی بیٹی ثنا ء راجہ عمر 12سال، راجہ ابراہیم عمر 11سال،محمد سبحان عمر 3سال، اور شمائلہ شامل ہیں۔

اپنی مدد آپ کے تحت عوام نے لاشوں کو رورل ہیلتھ سنٹر دینہ منتقل کیا ،ریسکیو1122بھی جائے وقوعہ پر پہنچ گئی، شدید فائرنگ کی وجہ سے علاقہ بھر میں خوف و ہراس پھیل گیا ہر طرف فضا سوگوار ہو گئی۔

اطلاع ملتے ہی ڈی پی او جہلم رانا عمر فاروق، ڈیس پی ایس، ایس ایچ او پولیس تھانہ منگلا کینٹ بھاری نفری کے ہمراہ موقع پر پہنچ گئے۔ لاشیں پوسٹمارٹم کے لیے ڈسٹرکٹ ہیڈ کواٹر ہسپتال منتقل کر دی گئیں۔

خادم حسین نے جہلم اپڈیٹس کو بتایا کہ میرا بیٹا نادر جو کہ میری پہلی بیوی سے ہے جس کو 15سال پہلے طلاق دے دی تھی اس نے گاڑی پر اندھا دھند فائرنگ کر دی میں نے بھاگ کر جان بچائی لیکن نادر نے میری بیوی، بیٹوں اور بیٹیوں کو قتل کرنے کے بعد فرار ہونے میں کامیاب ہو گیا ۔

خادم حسین نے بتایا کہ ہماری جائیداد کی وجہ سے رنجش چل رہی تھی جسکی بناء پر یہ واردات کی ہوئی، اس قتل میں میرا بھائی اور میرے بھتیجے بھی شامل ہیں اور فائرنگ میرے بیٹے نادر نے کی ہے۔

ذرائع کے مطابق جہلم پولیس کی معلومات پر میرپور پولیس نے کارروائی کرتے ہوئے ملزم نادر ولد خادم کو گرفتار کر لیا، ملزم سے آلہ قتل بھی برآمد کر لیا گیا۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.