جہلم

صفائی کے ناقص طریقہ کار کی وجہ سے مکھیوں اور مچھروں کی بہتات نے شہریوں کا جینا حرام کر دیا

جہلم: موسم کی تبدیلی کے ساتھ ہی صفائی کے ناقص طریقہ کار کی وجہ سے شہر و گردونواح میں مکھیوں اور مچھروں کی بہتات نے شہریوں کا جینا حرام کر دیا۔

میونسپل کارپوریشن کے سینٹری ورکروں نے شہر و جی ٹی روڈ سے ملحقہ نالوں کی گندگی نکال کر گلیوں ، سڑکوں پر ڈھیر لگا دئیے ، جو میونسپل کارپوریشن کے متعلقہ شعبہ کی نااہلی کا منہ بولتا ثبوت ہے ۔ جس کی وجہ سے گندگی اور غلاظت پچھلے کئی روز سے گلی محلوں سمیت سڑکوں پر موجود ہے اور اس گندگی سے مکھیاں اور مچھر کثرت سے پرورش پارہے ہیں۔

شہری مکھیوں اور مچھروں کی اس بہتات سے دوہری مصیبت کا شکار ہو رہے ہیں، مکھیوں اور مچھروں کی یلغار سے شہر کے گلی محلوںکے باسی بھی پریشان دکھائی دیتے ہیں، مکھیاں کھانوں اور اشیاء خوردونوش پر منڈلاتی دکھائی دیتی ہیں اور موذی امراض پھیلانے کا موجب بن رہی ہیں۔

زہریلے مچھر شام ہوتے ہی شہریوں کے گھروں پر ہلہ بول دیتے ہیں جس کیوجہ سے پورا دن محنت مزدوری کرنے والے محنت کشوں کی رات کی نیندیں حرام ہو جاتی ہیں مچھروں کی وجہ سے ملیریااور دیگر امراض تیزی سے پھیل رہے ہیں۔

شہریوں نے صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ میونسپل کارپوریشن کے سینٹری ورکرز گلی محلوں کی صفائی کرکے خالی جگہوں پر گندگی کے ڈھیر لگا دیتے ہیں اور اس وقت تک گندگی کے ڈھیر نہیں اٹھائے جاتے جب تک ان کی جیبیں گرم نہ کی جائیں ۔

شہریوں نے ڈپٹی کمشنر/ ایڈمنسٹریٹرمیونسپل کارپوریشن سے مطالبہ کیا ہے کہ شہر کے گلی محلوں سمیت نکاسی آب کے لئے بنائے گئے نالوں کی صفائی کروائی جائے تاکہ شہری گرمیوں کے موسم میں مکھیوں ، مچھروں سے محفوظ رہ سکیں ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button